کولمبیا میں عوام نے امن معاہدہ مسترد کر دیا

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption کولمبیا میں گذشتہ 52 برسوں سے خانہ جنگی جاری ہے

کولمبیا کی حکومت اور بائیں بازو سے تعلق رکھنے والے فارك باغیوں کے درمیان حال ہی میں طے پانے والے تاریخی امن معاہدے کو کولمبیا کے عوام نے مسترد کر دیا ہے۔

ملک میں اس حوالے سے ہونے والے ریفرنڈم میں 50.24 فیصد افراد نے معاہدے کے خلاف ووٹ ڈالا۔

یاد رہے کہ اس امن معاہدے کے بعد کولمبیا میں گذشتہ 52 برسوں سے جاری خانہ جنگی کا خاتمہ ممکن ہے اور امید کی جا رہی تھی کہ کولمبیا کے عوام اس معاہدے کا خیر مقدم کریں گے۔

اس معاہدے کے ساتھ ہی یورپی یونین نے فارك باغیوں کو شدت پسند تنظیموں کی فہرست سے خارج کر دیا اور امن سمجھوتہ نافذ ہونے کے بعد یورپی یونین کولمبیا کی ترقی میں مدد کر سکے گا۔

گذشتہ ماہ كارٹیجینا میں فارك باغیوں کے لیڈر تمانشیكو اور کولمبیا کے صدر یوان مینوئل سینٹوس نے معاہدے پر دستخط کیے تھے۔ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون کے علاوہ لاطینی امریکی ممالک کے رہنما بھی اس موقع پر موجود تھے۔

اسی بارے میں