’پاناما لیکس پر سپریم کورٹ کا فیصلہ قبول کریں گے‘

عمران خان تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption حامد خان 20 سال سے ہمارے ساتھی ہیں اور میں ان کی عزت کرتا ہوں: عمران خان

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پاناما لیکس کے مقدمے میں سپریم کورٹ جو فیصلہ کرے گی اسے قبول کریں گے۔

مانچیسٹر پہنچنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ پہلی دفعہ ملک کا ایک چیف ایگزیکٹو عدالت کے کٹہرے میں کھڑا ہے۔

پاناما لیکس: حامد خان کی پی ٹی آئی کی نمائندگی سے معذرت

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ پاناما لیکس کے مقدمے میں ہم عدالت کی مدد کر رہے ہیں کیونکہ ہم نے عدالت میں ثبوت پیش نہیں کرنے بلکہ نواز شریف نے ثبوت پیش کرنے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ لندن میں کوئی سازش نہیں ہو رہی اور میں یہاں اپنے دوست کی شادی میں شرکت کے لیے آیا ہوں اور کے بعد واپس پاکستان چلا جاؤں گا۔

عمران خان کا پاکستان تحریک انصاف کے وکیل حامد خان کی جانب وزیر اعظم کے خلاف پاناما لیکس کے معاملے پر سپریم کورٹ میں دائر کی گئی درخواست کی پیروی کرنے سے معذوری ظاہر کے حوالے سے کہنا تھا ان کے خیال میں حامد خان پر میڈیا کا پریشر ہے۔

انھوں نے کہا کہ حامد خان 20 سال سے ہمارے ساتھی ہیں اور میں ان کی عزت کرتا ہوں لیکن مجھے یہ معلوم نہیں کہ ان پر اتنا پریشر کیسے پڑ گیا۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے وکیل حامد خان نے وزیر اعظم کے خلاف پاناما لیکس کے معاملے پر سپریم کورٹ میں دائر کی گئی درخواست کی پیروی کرنے سے معذوری ظاہر کرتے ہوئے پی ٹی آئی کی قیادت کو آگاہ کردیا ہے۔

اسی بارے میں