رپبلکن سیاست دان گولی لگنے سے زخمی، حملہ آور ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کانگریس کی ٹیم میدان میں بیس بال کھیل رہی تھی جب یہ حملہ ہوا

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ریاست ورجنیا میں رپبلکن پارٹی کے سیاست دان سٹیو سکالس کو گولی مارنے والا حملہ آور ہلاک ہو گیا ہے۔

ریاست ورجنیا میں ریپبلیکن پارٹی کے سیاست دان سٹیو سکالِس اور ان کے معاونین گولیاں لگنے سے زخمی ہوگئے تھے۔

حملہ آور کی شناخت جیمز ٹی ہاڈجکنسن کے نام سے ہوئی ہے جو پولیس کے ساتھ مقابلے میں مارے گئے۔

زخمیوں میں دو پولیس اہلکار بھی شامل ہیں جنھیں خطرے سے باہر بتایا جاتا ہے۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس حملے کو ’انتہائی وحشیانہ حملہ قرار دیا ہے۔‘

اس سے قبل پولیس نے ایک ٹویٹ میں کہا تھا کہ 'پولیس کئی گولیاں چلائے جانے کے واقعے کی تحقیق کر رہی ہے اور ایک شخص کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔'

ایک عینی شاہد نے ٹوئٹر پر کہا ہے کہ سمپسن سٹیڈیم پارک کے قریب واقع بیس بال کے میدان میں گولیاں چلنا شروع ہوگئیں۔ عینی شاہد کے مطابق وہاں پر اس وقت کانگریس کی بیس بال ٹیم پریکٹس کر رہی تھی۔

مقامی میڈیا کے مطابق اس واقعے کے بعد سے وہاں بہت زیادہ تعداد میں پولیس موجود ہے۔

سینیٹر مائک لی نے فوکس نیوز کو ٹیکسٹ میں کہا ہے کہ مسٹر سٹیو سکیلائس کو کولہے پر گولی لگی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گولی مارنے والے نے لمبی بندوق سے حملہ کیا۔

وائٹ ہاؤس میں پریس سیکریٹری شون سپائسر نے ٹویٹ میں کہا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو صورتِ حال سے باخبر رکھا جا رہا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں