’نواز شریف کی سخت زبان سے اپنی جماعت خوفزدہ‘
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

نوازشریف کی سخت زبان سے ان کی اپنی جماعت میں خوف و ہراس پیدا ہوا ہے

سینئیر صحافی اور انیکر پرسن حامد میر کا کہنا ہے نوازشریف کے جی ٹی روڈ پر مارچ کرنے کے بعد اسٹبلشمنٹ کو احساس ہوا کہ نوازشریف ان کے ساتھ کھلم کھلا محاز کی تیاری کر رہے ہیں اور اب لگ رہا ہے انہوں نے بھی تیاری شروع کر دی ہے۔ بی بی سی اردو کے پروگرام سیربین میں بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نوازشریف نے اپنی تقاریر میں جو زبان استعمال کی ہے اس سے ان کی اپنی پارٹی کی صفوں میں خوف و ہراس پیدا ہوا ہے