ایشوریہ اور رنبیر کے ہاٹ سینز پر قینچی

ایشوریہ رائے اور رنبیر کپور تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption فلم میں ایشوریہ اور رنبیر کپور کے ہاٹ سینز نکالنے کی خبریں ہیں

خبر ہے کہ انڈین سینسر بورڈ نے فلم 'اے دل ہے مشکل' سے رنبیر کپور اور ایشوریہ رائے کے درمیان ہاٹ سینز نکالنے کے بعد فلم کو سرٹفکیٹ جاری کر دیا لیکن دھرما پروڈکشن نے اس بات سے انکار کیا ہے۔ کیونکہ یہ خبر انکی پروموشن سٹریٹجی کے خلاف جاتی ہے۔

فلم میں فواد خان کی موجودگی سے زیادہ لوگ رنبیر اور ایشوریہ کی ہاٹ کیمسٹری دیکھنے کے لیے بیتاب ہیں۔ ایک تو ویسے ہی یہ فلم مشکلوں سے دوچار ہے۔

انڈیا پاکستان میں سرحد پر کشیدگی کے بعد فواد کو نکالنے کے مطالبے پہلے ہی کیے جا رہے ہیں، اب اگر فلم سے ایش اور رنبیر کے سینز بھی نکال دیے گئے تو پھر بپلک کے لیے فلم میں بچا کیا۔ ویسے خبریں ہیں کہ فواد فلم میں ہیں۔

اب اس فلم اور فواد کے بارے میں مختلف افواہیں اور قیاس آرائیاں جا ری ہیں لیکن کرن جوہر کی جانب سے اس بارے میں ابھی تک کچھ نہیں کہا گیا۔ وہ اس بارے میں بلکل خاموش ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption فلم اے دل ہے مشکل سے پاکستان اداکار کو نکالنے کا مطالبہ بھی کیا گیا ہے

لیکن لگتا ہے کہ فلم 'اے دل ہے مشکل' کی مشکلات ختم ہونے کا نام ہی نہیں لے رہیں۔ پہلے ایک سیاسی پارٹی نے فلم سے فواد خان کو نکالنے کا مطالبہ کیا اور اب سنیما اونرز ایسو سی ایشن آف انڈیا کے اراکین نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اپنے تھیئٹرز میں ایسی کوئی فلم نہیں دکھائیں گے جس میں پاکستانی فنکار ہوں۔

اب اس کا سیدھا اثر کرن جوہر کی فلم 'اے دل ہے مشکل' پر ہو سکتا ہے۔ یہ فلم 28 اکتوبر کو ریلیز ہونے والی ہے۔

بالی وڈ میں اس بارے میں مِلا جلا رد عمل سامنے آرہا ہے لیکن ایک بات پر زیادہ تر لوگ متفق نظر آتے ہیں کہ یہ فلم اس تنازع سے پہلے بن چکی تھی اور یہ فنکار کام کرنے کے قانونی ویزے پر تھے اور سب سے بڑی بات یہ کہ فلم پر کروڑوں روپے داؤ پر لگے ہیں تو اس صورتِ حال میں بیچارے پروڈیوسرز اور ڈسٹری بیوٹرز نقصان کیوں اٹھائیں۔

اب دیکھنا ہے کہ کرن وقت پر ہی فلم ریلیز کرنے کا جوکھم اٹھائیں گے یا پھر ماحول ٹھنڈا ہونے کا انتظار کریں گے؟

کنگنا کی خوش فہمی!

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption کنگنا رناوت نے فلم کوئن اور تنو ویڈز منو میں اپنی اداکاری کا جوہر دکھایا ہے

فلم 'کوئن' اور 'تنو ویڈز منو' جیسی ہٹ فلمیں دینے والی اداکارہ کنگنا رناوت ریتک روشن کے ساتھ طویل جنگ کے بعد کافی سمجھداری کی باتیں کرنے لگی ہیں۔

بحرحال کنگنا کا کہنا ہے کہ جس طرح کامیابی کے ساتھ کسی طرح کا پریشر نہیں آتا اسی طرح نا کامی سے یہ ثابت نہیں ہوتا کہ آپ میں صلاحیتیں موجود نہیں یا آپ ناکارہ ہیں۔

کنگنا کہتی ہیں کہ وہ کسی فلم کا انتخاب یہ سوچ کر نہیں کرتیں کہ اس کے بعد انڈسٹری میں ان کی پوزیشن پہلے سے بہتر ہوگی اور نہ ہی انھوں نے اپنے کام کے لیے کوئی پیمانہ یا میعار طے کر رکھا ہے، اور نہ ہی وہ خود پر کسی طرح کا دباؤ ڈالتی ہیں۔

کنگنا نے ایک اور بات بھی کہی کہ وہ واحد 'ٹاپ ایکٹریس' ہیں جس نے بی گریڈ کی فلموں میں کام کیا ہے۔

کنگنا کو اپنے ریکارڈز چیک کرنے کی ضرورت ہے پہلے تو اپنے بارے میں 'ٹاپ ایکٹریس' ہونے کی خوش فہمی اور دوسرے بڑی ہیروئنز کے بی گریڈ میں کام نہ کرنے کی بات اس کی سب سے بڑی مثال قطرینہ کیف ہیں جو واقعی ٹاپ کی ہیروئن کہلاتی ہیں اور انھوں نے 'بوم' جیسی گریڈ تھری فلم میں کام کیا تھا۔

'چاندنی کا ایڈلٹ ورژن'

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اطلاعات کے مطابق فلم بے فکرے میں رنویر سنگھ اور وانی کپور میں کئی ہیجان انگیز مناظر ہیں

یہ تو سبھی جانتے ہیں کہ رشی کپور اپنی ہر رائے، مشورے، طنز اور مذاق ٹوئٹر پر ظاہر کرتے ہیں۔ اب یہ اور بات ہے کہ انکا انداز ذرا تیکھا ہو تا ہے۔

لیکن اس بار انھوں نے فلم 'بے فکرے' پر کھل کر تبصرہ کیا ہے۔ رشی کپور کہتے ہیں کہ یہ فلم 'چاندنی' فلم کا 'ایڈلٹ ورژن' ہے۔

رنویر سنگھ اور وانی کپور کی اس فلم کو رومانٹک فلم کہا جائے یا کچھ اور، کہا نہیں جا سکتا کیونکہ فلم کا ٹریلر جس میں وانی اور رنویر کے طویل بوسے نے لوگوں میں ہیجان بپا کر رکھی ہے واقعی کسی بھی فلم کا 'ایڈلٹ ورژن' لگتا ہے۔

اور یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ 'یہ تو ٹریلر تھا پکچر ابھی باقی ہے۔' خیر سینسر بورڈ میں جانے کے بعد فلم میں کچھ باقی بچے گا یا نہیں یہ تو وقت ہی بتائے گا!

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں