شاہ رخ اور عامر کی مقبولیت کا امتحان

عامر خان تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption عامر خان کو بالی وڈ کا بہترین اداکار تصور کیا جاتا ہے

انڈیا کے معروف فنکار شاہ رخ خان کی آنے والی فلم 'رئیس' کا ٹریلر جاری کر دیا گیا ہے ۔ فلم کے ماہرین اور عام شا‏‏ئقین نے ٹریلر کی تعریف کی ہے۔

اس فلم میں بھارت میں دکھائی جانے والی پاکستانی سیریل 'ہم سفر' سے شہرت پانے والی پاکستان کی مقبول اداکارہ ماہرہ خان ہیروئن کا کردار ادا کر رہی ہیں۔

’عامر خان موٹو پتلو کے لیے فٹ ہیں‘

'شاہ رخ کے ساتھ رومانس نہ کرنے کا افسوس نہیں'

’ہم سفر‘ کی ماہرہ خان ’رئیس‘ کی بیگم

شاہ رخ خان اب بھی مقبولیت کی بلندیوں پر ہیں اور فلم کے شائقین عمموماً ان کی فلم کو ایک بار دیکھنا ضرور پسند کرتے ہیں۔ ان کی فلموں کا انتظار رہتا ہے۔ فلم میں ایک پاکستانی اداکارہ کی شمولیت معمول کے دنوں میں اس فلم کو اور بھی زیادہ پر کشش بنا سکتی تھی لیکن نفرتوں کے اس ماحول میں فلم کے بارے میں طرح طرح کے شک وشبہات پیدا ہوتے رہتے ہیں۔

انڈیا اور پاکستان کے درمیان حالیہ کشیدگی کے درمیان اکتوبر میں ہدایت کار کرن جوہر کی فلم 'اے دل ہے مشکل' کی ریلیز خطرے میں پڑ گئی تھی۔ مہاراشٹر کی سخت گیر تنظیم ایم این ایس نے اس فلم میں مقبول پاکستانی اداکار فواد خان کے ہونے کے سبب اس فلم کو ریلیز نہ ہونے دینے کی دھمکی دی تھی۔ آخری وقت میں حکومت کی ثالثی میں اس یقین دہانی کے بعد یہ فلم ریلیز ہو سکی تھی کہ مستقبل میں کرن پاکستانی اداکاروں کو اپنی فلم میں کاسٹ نہیں کریں گے۔

شاہ رخ کی فلم 'رئیس' جنوری سنہ 2017 میں ریلیز ہو گی۔ ابھی فلم کے خلاف کسی تنظیم یا گروپ کی جانب سے براہ راست کوئی بیان نہیں آیا لیکن سوشل میڈیا پر کئی جگہ 'بائیکاٹ شاہ رخ' اور 'بائیکاٹ رئیس' کے پیغامات چل رہے ہیں۔ حالیہ مہینوں میں ان کی دو اور فلمیں 'ڈیر زندگی' اور 'فین' ریلیز ہو چکی ہیں اور اس طرح کی مہموں کا بظاہر ان پر کوئی اثر نہیں پڑا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شاہ رخ خان اب بھی مقبولیت کی بلندیوں پر ہیں اور فلم کے شائقین عمموماً ان کی فلم کو ایک بار دیکھنا ضرور پسند کرتے ہیں

شاہ رخ سے بڑا چیلنج عامر خان کو درپیش ہے۔ ان کی فلم 'دنگل' اس مہینے کرسمس کے موقعے پر ریلیز ہو رہی ہے۔ یہ فلم ہریانہ کے ایک پہلوان کی زندگی پر بنی ہے جو بعد میں ایک کوچ بنے اور ان کی تریبت میں ان کی اپنی بیٹی نے کشتی میں کامن ویلتھ گیمز میں گولڈ میڈل جیتا تھا۔ اس فلم کے لیے عامر نے اپنے کردار کی مناسبت سے اپنا وزن کافی بڑھایا تھا۔

عامر خان کو بالی وڈ کا بہترین اداکار تصور کیا جاتا ہے۔ وہ بھارتی شائقین میں کافی مقبول رہے ہیں لیکن کچھ عرصے پہلے انھوں نے ایک انٹرویو میں انڈیا میں بڑھتی ہوئی عدم رواداری اور تنگ نظری پر اپنی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے جب اپنی بیوی کے حوا لےسے یہ کہا کہ ان حالات میں کہیں انھیں ملک ہی نہ چھوڑنا پڑے تو ان کے خلاف تنقید اور نفرت کا سیلاب امڈ پڑا۔

ان کے اس بیان پر ٹی وی چینلوں پر بحث ہوئی، سوشل میڈیا میں ان کے بائیکاٹ کی مہم چلائی گئی۔ دباؤ اتنا بڑھا کہ بہت سی کمپنیوں نےانھیں اپنے اشتہاروں سے نکال دیا۔ اس صورت حال کے بعد 'دنگل' ان کا پہلا امتحان ہو گا۔

ادھر سخت گیر تنظیموں کی دھمکیوں کے بعد بالی وڈ کی نئی فلموں میں پاکستانی اداکاروں اور گلوکاروں کو کاسٹ نہیں کیا جا رہا۔ انڈیا اور پاکستان کی کشیدگی اب سرحدوں سے نکل کر سپورٹس، آرٹس اور عوامی رشتو ں تک پہنچ چکی ہے۔

اس ماحول میں 'دنگل' اور آئندہ مہینے 'رئیس' ریلیز ہو رہی ہیں۔ یہ دونوں فلمیں بڑے بجٹ کی فلمیں ہیں اور فلم انڈسٹری ان سے کافی امید کر رہی ہے۔

عامر خاں اور شاہ رخ خان جیسے اداکاروں کی موجودگی باکس آفس پر کسی بھی فلم کی کامیابی کی ضمانت ہوتی ہے۔ یہ اداکار ایک طویل عرصے سے فلم کے پردے پر حکمرانی کرتے رہے ہیں۔

کئی فلم نقادوں کا خیال ہے کہ ان دونوں سپر سٹارز کی مقبولیت اب ڈھل رہی ہے۔ ان کی مقبولیت میں کمی آتی ہے یا اب بھی وہ اپنےشائقین کےدلوں پر حکومت کر رہے ہیں؟ یہ ان دونوں فلموں سے پتہ چل سکے گا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں