'دلیپ کمار کا اظہار محبت یاد ہے'

دلیپ کمار اور کامنی کوشل
Image caption دلیپ کمار اور اداکارہ کامنی کوشل نے کئی فلموں میں اہم کردار ادا کیا ہے

انڈیا کے معروف اداکار دلیپ کمار آج 94 سال کے ہو گئے ہیں اور ان کے ساتھ فلم 'شہید' (1948)، 'ندیا کے پار' (1949)، 'شبنم' (1949) اور 'آرزو' (1950) جیسی ہٹ فلموں میں کام کرنے والی اداکارہ کامنی کوشل 89 سال کی ہیں۔

گذشتہ برس ایک بات چیت میں کامنی کوشل نے بتایا کہ دونوں ہی کافی عرصے سے ایک دوسرے سے ملے نہیں ہیں اور نہ ہی کوئی بات ہوئی ہے لیکن انھیں دلیپ کمار کی جانب سے محبت کا اظہار یاد ہے۔ دلیپ کمار کی سوانح عمری میں کامنی کوشل کی جانب کشش کا ذکر ہے۔

٭ دلیپ کمار کی زندگی پر ایک نظر

دلیپ کمار کو یاد کرتے ہوئے کامنی کوشل نے بتایا تھا: 'میں فلموں کو بہت سنجیدگی سے نہیں لیتی تھی کیونکہ ہمارا کام ہی فلموں میں کام کرنا تھا اور زندگی فلموں سے باہر تھی۔ فلموں کے باہر دلیپ کمار سے میرا رشتہ بہت ہی مختلف تھا۔'

Image caption فلم شہید میں پہلی بار دلیپ کمار اور کامنی کوشل نے ایک ساتھ کام کیا

انھوں نے بتایا: 'ہاں مجھے معلوم ہے کہ دلیپ کے دل میں کیا تھا۔ ایسا ہوتا ہے، آپ کسی کی جانب کشش محسوس کرتے ہیں، محبت کرتے ہیں لیکن ذاتی زندگی میں آپ کی مجبوریاں ہوتی ہیں جن کے سبب آپ بے بس ہوتے ہیں۔'

دراصل جس وقت دلیپ کمار نے کامنی کوشل سے اپنے جذبات کا اظہار کیا تھا اس وقت تک ان کی شادی ہو چکی تھی۔

٭ دلیپ کمار کی کچھ تصویریں

اس کے بعد کے حالات پر کامنی کوشل کا کہنا تھا: 'مجھ پر میری بہن کی دو بیٹیوں کی ذمہ داری تھی۔ ان کے لیے میں نے اپنی بہن کے شوہر سے شادی کی۔ میرے لیے ہمیشہ ہی خاندان اہمیت کا حامل رہا۔ ایسے میں کسی دوسری تجویز یا محبت کے لیے جگہ نہیں تھی۔'

کامنی کوشل نے ایک عرصے کے بعد دلیپ کمار کے ساتھ کام کرنا بند کر دیا تھا۔ شاید اس کی وجہ دلیپ کمار کا اظہار عشق تھا جسے کامنی کوشل قبول نہیں کر سکی تھیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ SAIRA BANO
Image caption راج کپور دیو آنند اور دلیپ کمار اپنے زمانے کے بہترین اداکار کے علاوہ دوست بھی تھے

عمر کے ساتھ کامنی کوشل کی یادداشت قدرے کمزور محسوس ہو رہی تھی لیکن انھیں یاد تھا کہ سائرہ بانو سے پارٹیوں میں ہونے والی اکا دکا ملاقاتوں اور دو مرتبہ فون پر حال احوال پوچھنے کے علاوہ زیادہ بات نہیں ہوئی۔

دلیپ کمار سے اپنی آخری ملاقات کو یاد کرکے وہ تھوڑی جذباتی ہو گئیں: 'میں نے کئی بار ان کو فون کیا لیکن بات نہیں ہو سکی اور پھر ایک دن ایک فلم ایوارڈ تقریب کے دوران مجھے وہ پہلی قطار میں بیٹھے نظر آئے۔'

٭ 'صاحب عالم یعنی دلیپ کمار'

کامنی کوشل نے بتایا: 'میں انتہائی خوشی سے ان کے پاس گئی اور کچھ دیر بیٹھی پھر انھوں نے میری طرف دیکھا لیکن پہچانا نہیں۔ ایسا لگا جیسے انھوں نے میرے آر پار دیکھا ہو۔ جیسے میں وہاں تھی ہی نہیں۔ یہ دلدوز تجربہ تھا۔'

کامنی کوشل کو بتایا گیا کہ دلیپ کمار کی طبیعت اب ٹھیک نہیں رہتی اور وہ بس سنتے ہیں زیادہ بولتے نہیں، ان کا ہر کام سائرہ بانو ہی کرتی ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ BIBHUTI MITRA
Image caption شبنم کے پوسٹر میں دلیپ کمار سے پہلے کامنی کوشل کا نام بتاتا ہے کہ انھیں اس وقت دلیپ کمار سے زیادہ اہمیت حاصل تھی

دلیپ کمار سے اپنی اس ملاقات کے بارے میں انھوں نے کہا: 'مجھے ان کا بہت دکھ ہے اور مجھے لگتا ہے کہ سائرہ کو اب دلیپ کو اس طرح عوام کے سامنے نہیں لے جانا چاہیے، اس طرح اچھا نہیں لگتا، وہ کمال کی توانائی والا کرشمائی آدمی ایسے بت بنا اچھا نہیں لگتا۔۔۔ بس پھر ہم نہیں ملے، میں نے ملنے کی کوشش نہیں کی کیونکہ مجھے یاد ہے، وہ مجھے نہیں پہچانتے۔'

٭ دلیپ کمار سے خصوصی بات چیت

دلیپ کمار کے ساتھ اپنی کچھ پرانی تصاویر کو کامنی کوشل نے سنبھال کر رکھا تھا لیکن وہ تصاویر اب امریکہ میں رہنے والے ان بیٹے کے پاس ہیں۔

وہ کہتی ہیں: 'میں نے اسے وہ تصاویر کلکشن کے لیے لے جانے دیں، کیونکہ اب میں ان کا کیا کرتی۔'

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں