’لا لا لینڈ‘ 14 نامزدگیوں کے ساتھ سب سے آگے

'لا لا لینڈ' تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption رومانوی فلم 'لا لا لینڈ' کو 14 زمروں میں ایوارڈز کے لیے نامزد کیا گیا ہے

ہالی وڈ کے معروف آسکر ایوارڈز کے لیے حتمی نامزدگیوں کا اعلان کر دیا گیا ہے اور گولڈن گلوب ایوارڈز میں تاریخ رقم کرنے والی فلم 'لا لا لینڈ' سب سے زیادہ آسکرز نامزدگیاں حاصل کرنے والی میوزیکل فلم بن گئی ہے۔

رومانوی فلم 'لا لا لینڈ' کو 14 زمروں میں آسکر ایوارڈز کے لیے نامزد کیا گیا ہے اور اس طرح نہ صرف اس نے میری پوپنز نامی میوزیکل فلم کا 13 زمروں میں نامزدگی کا ریکارڈ توڑا ہے بلکہ آسکرز میں مجموعی نامزدگیوں کا ریکارڈ برابر بھی کیا ہے۔

اس سے قبل 'ٹائٹینک' اور 'آل اباؤٹ ایوو' نامی فلمیں بھی 14 زمروں میں آسکرز کی نامزدگیاں حاصل کر چکی ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ HFPA/EPA
Image caption میرل سٹریپ کو 20ویں مرتبہ آسکرز کی نامزدگی ملی ہے جو کہ ایک ریکارڈ ہے

'لا لا لینڈ' کو بہترین فلم کے علاوہ اس کے ہدایتکار ڈیمیئن چیزیل اور مرکزی کرداروں ایما سٹون اور رائن گوسلنگ کو بہترین اداکارہ اور اداکار کے ایوارڈ کے لیے نامزدگی ملی ہے۔

بہترین فلم کے ایوارڈ کے لیے لیے اس سال کُل نو فلموں کو نامزدگی ملی ہے جن میں 'لا لا لینڈ' کے علاوہ منشیات کا شکار امریکی شہر میامی میں اپنی جنسیت سے نبرد آزما ایک سیاہ فام نوجوان کی کہانی 'مون لائٹ'، معروف اداکار میل گبسن کی بطور ہدایتکار فلم 'ہیکسا رِج'، سائنس فکشن فلم 'ارائیول'، 'مانچسٹر بائی دا سی'، 'ہیل اور ہائی واٹر'، اداکار ڈینزل واشنگٹن کی بطور ہدایتکار فلم 'فینسز'، 'ہڈن فگرز' اور 'لائن' شامل ہیں۔

بہترین ہدایتکار کے لیے جو افراد نامزد کیے گئے ہیں ان میں میل گبسن اور ڈیمیئن چیزیل کے علاوہ ڈینیس ویلینوو (ارائیول)، کینتھ لورنرگن (مانچسٹر بائی دا سی) اور بیرن جینکنز (مون لائٹ) شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ PABLO LARRAINS
Image caption نیٹلی پورٹمین نے فلم جیکی میں جے ایف کینیڈی کی اہلیہ کا کردار ادا کیا ہے

بہترین اداکارہ کے زمرے میں 'لا لا لینڈ' کے لیے نامزد ہونے والی ایما سٹون اور نیٹلی پورٹ مین کے درمیان سخت مقابلے کی توقع کی جا رہی ہے۔ نیٹلی نے فلم 'جیکی' میں سابق خاتونِ اول جیکولین کینیڈی کا کردار نبھایا ہے۔

ان کے علاوہ نامزد ہونے والی فنکاراؤں میں ایزابیل ہوپرٹ (ایل)، روتھ نیگا( لوونگ) اور میرل سٹریپ( فلورنس فوسٹر جینکنز) شامل ہیں۔

رواں ماہ کے وسط میں گولڈن گلوب ایوارڈز کی تقریب میں امریکی صدر ٹرمپ کے خلاف اپنی تقریر سے خبروں میں آنے والی میرل سٹریپ کی آسکرز کے لیے یہ 20ویں نامزدگی ہے جو کہ ایک ریکارڈ ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ JAN THIJS
Image caption ارائیول کی سٹار ایمی ایڈمز کو پانچ بار نامزدگی مل چکی ہے لیکن انھیں انعام کبھی نہیں مل سکا ہے

بہترین اداکاروں میں رائن گوسلنگ کا مقابلہ کیسی ایفلک( مانچسٹر بائی دا سی)، اینڈریو گارفیلڈ (ہیکسا رج)، ویگو مورٹنسن (کیپٹن فینٹاسٹک) اور ڈینزل واشنگٹن (فینسز) سے ہے۔

بہترین معاون اداکار کے زمرے نامزدگی پانے والوں میں ایک حیران کن نام دیو پٹیل کا ہے جنھیں فلم 'لائن' کے لیے نامزد کیا گیا ہے جبکہ ان کے علاوہ مہرشالہ علی (مون لائٹ)، جیف بریجز ( ہیل اور ہائی واٹر)، لوکاس ہیجز (مانچسٹر بائی دا سی) اور مائیکل شینن (نکٹرنل اینیملز) بھی نامزد ہونے والوں میں شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ DAVID LEE
Image caption ڈینزل واشنگٹن کو بطور اداکاری کے زمرے میں نامزد کیا جا سکتا ہے

بہترن معاون اداکارہ کے آسکر ایوارڈ کے لیے نامزدگی حاصل کرنے والوں میں وایولا ڈیوس (فینسز)، نوامی ہیرس (مون لائٹ)، نکول کڈمین (لائن)، مشیل ولیمز( مانچسٹر بائی دا سی) اور آکٹویا سپنسر (ہڈن فگرز) شامل ہیں۔

خیال رہے کہ دو سال سے کسی بھی سیاہ فام اداکار کو آسکرز میں نامزدگی نہیں مل رہی تھی لیکن اس بار ایسا نہیں ہوا اور ڈینزل واشنگٹن، وایولا ڈیوس، نوامی ہیرس، مہرشالہ علی اور آکٹویا سپنسر نامزد ہوئے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ A24
Image caption برطانوی اداکارہ نوامی ہیرس سمیت کئی سیاہ فلم اداکار اس مرتبہ آسکرز کے لیے نامزد ہوئے ہیں

بہترین غیر ملکی فلم کے لیے ایرانی فلم 'دا سیلز مین' کے علاوہ سویڈن کی ' اے مین کالڈ اوو'، ڈنمارک کی 'لینڈ آف مائن'، آسٹریلیا کی 'تنّا' اور جرمن فلم 'ٹونی اردمان' کو نامزد کیا گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ SUMMIT
Image caption میل گبسن کو ان کی فلم ہیکسا رج کے لیے بہترین ہدایتکار کے زمرے میں نامزدگی ملی ہے

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں