کیا اڈیل نے اپنا گریمی بیونسے کو دے دیا؟

اڈیلے تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption اڈیلے کے البم 25 کی ریکارڈ فروخت ہوئی

معروف برطانوی گلوکارہ اڈیل نے بہترین البم کا گریمی ایوارڈ لینے سے بظاہر یہ کہتے ہوئے انکار کر دیا ہے کہ اس کی زیادہ حقدار بیونسے ہیں۔

خیال رہے کہ پاپ سٹار کو ان کے ریکارڈ قائم کرنے والے البم 25 کے لیے گذشتہ رات کا بہترین ایوارڈ دیا گیا لیکن انھوں نے ناظرین سے یہ کہا کہ وہ اس ایوارڈ کو قبول نہیں کر سکتیں۔

'اس کے لیے میں بہت ممنون و شکرگزار ہوں لیکن بیونسے میری سب سے پسندیدہ فنکارہ ہیں۔'

بیونسے پر اڈیل کی فتح سے اس شکایت کو تقویت ملتی ہے کہ سیاہ فام فنکاروں کو نظر انداز کرنا گریمی کی عادت میں شامل ہے۔

فریک اوشین اور کینیے ویسٹ جیسے کئی اداکاروں نے اس بنیاد پر رواں سال منعقد ہونے والی تقریب میں شرکت کرنے سے گریز کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption بیونسے کا پروگرام گذشتہ رات کا سب سے زیادہ حوصلہ مندانہ پروگرام تھا

یہاں تک کہ اوشین نے اپنے البم 'بلونڈ' کو اس ایوارڈ میں شامل کیے جانے سے منع کر دیا۔ انھوں نے کہا کہ 'گریمی ایسے لوگوں کا بہت خیال رکھتی ہے جہاں سے میں تعلق رکھتا ہوں اور ان چیزوں کو نظر انداز کرتی ہے جسے ہم نظر انداز کرتے ہیں۔'

دو سال قبل ویسٹ اس وقت احتجاجاً سٹیج پر چلے آئے تھے جب بیک کے 'مارننگ فیز' نے بہترین البم کے مقابلے میں بیونسے کے 'ایل پی' کو شکست دے دی تھی۔

اڈیل کا البم '25' رواں سال مقابلے میں شامل سب سے زیادہ فروخت ہونے والا البم تھا اور یہ بیونسے کے البم لیمونیڈ سے دس کے مقابلے ایک سے آگے تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption برونو مارس نے راک لیجنڈ پرنس کو خراج عقیدت پیش کیا

تاہم ابھی واضح نہیں کہ آیا اڈیل باضابطہ طور پر اس ایوارڈ کو مسترد کر دیں گی۔ اگر وہ ایسا کرتی ہیں تو تاریخ میں دوسری بار ایسا ہوگا۔

اس سے قبل سنہ 1990 میں شنیڈ او کونر نے 'آئی ڈو ناٹ وانٹ واٹ آئی ہے ناٹ گاٹ' کے لیے ملنے والے بہترین متبادل البم کے اعزاز کو یہ کہتے ہوئے ٹھکرا دیا تھا کہ یہ تقریب بہت زیادہ 'کاروباری' ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شکاگو کے چانس دا ریپر کو تین ایوارڈ ملے جن میں بہترین ریپ البم شامل تھا

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں