'لِپسٹک انڈر مائی برقعہ' عورتوں کے جنسی تخیل کی کہانی ہے

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں
کنگنا رناوت شاہد کپور سے کیوں امپریس ہیں۔ بالی ووڈ راؤنڈ اپ نصرت جہاں کے ساتھ

یوں تو بالی وڈ میں فلمسازوں اور سینسر بورڈ کے درمیان ٹکراؤ اور تنازع اب ایک معمول کی بات ہے جس میں عموماً فلمساز کافی جد و جہد کے بعد سینسر بورڈ کے منھ سے اپنی فلم کسی نے کسی طرح چھڑانے میں کامیاب ہو ہی جاتے ہیں۔ اب چاہے وہ فلم 'علی گڑھ 'ہو یا 'اڑتا پنجاب۔'

سینٹرل بورڈ آف فلم سرٹیفکیشن اور بالی وڈ ایک بار پھر آمنے سامنے ہیں۔ اس مرتبہ النکِریتا سری واستو کی فلم 'لِپسٹک انڈر مائی برقعہ' سینسر بورڈ میں پھنس چکی ہے اور بورڈ نے اس فلم کو سرٹیفکیٹ دینے سے انکار کر دیا ہے۔ بالی وڈ کے دیگر فلسماز ایک بار پھر سینسر بورڈ کے خلاف اور اس بار النکِریتا سری واستو کے ساتھ کھڑے ہیں۔

اس فلم کی کہانی بھوپال کی چار خواتین کی جنسی بیداری اور جنسی تخیل کے بارے میں ہے۔ 15 سے 55 برس کی یہ خواتین مردوں کے غلبے والے معاشرے کے تمام بندھنوں کو توڑ کر اپنی ذات کو دریافت کرنا چاہتی ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بالی وڈ فلم ساز کی حمایت میں کھڑا ہوا ہے

فلم کا مضمون تو اچھا ہے۔ لیکن جب میں نے دفتر میں نے اس فلم کا دو منٹ کا ٹریلر دیکھنے کی کوشش کی تو کچھ سکینڈ بعد ہی گھبرا کر ٹریلر بند کر دیا۔ اس لیے نہیں کیونکہ میں بھی سینسر بورڈ کی طرح فلم میں انسان کے ایسے ذاتی اور حقیقی لمحات کو پردے پر لانے یا دیکھنے کے خلاف ہوں جن کا اظہار کسی کے سامنے کرنا معاشرے میں بے ادبی یا بد تمیزی سمجھا جاتا ہے۔ بلکہ شاید اس ڈر سے کہ میرے ارد گرد موجود میرے ساتھی میرے بارے میں کیا سوچیں گے۔ شاید بات ہماری سوچ پر آ کر ٹھہر جاتی ہے اور کہتے ہیں کہ سوچ ہی ہے جو صحیح اور غلط کا فیصلہ کرتی ہے۔

بحرحال سینسر بورڈ کا فیصلہ ہے کہ فلم کے مناظر اور زبان قابلِ اعتراض ہیں۔ سینسر بورڈ کے اس فیصلے کے بعد سوشل میڈیا پر جہاں فلم کی حمایت میں لوگ ٹویٹ کر رہے ہیں وہیں اس بات پر بھی بحث ہو رہی ہے کہ جنسی معاملات کو کس انداز میں اور کس حد تک پردے پر دکھایا جانا درست ہے۔

Image caption الیانہ ڈی کروز کو رنبیر کپور، اکشے کمار اور اجے دیو گن جیسے بالی وڈ کے بڑے سٹارز کے ساتھ مرکزی کردار ملے ہیں

الیانہ ڈی کروز ایسی اداکارہ ہیں جنھیں رنبیر کپور، اکشے کمار اور اجے دیو گن جیسے بالی وڈ کے بڑے سٹارز کے ساتھ مرکزی کردار ملے ہیں۔ انھوں نے فلم ’برفی‘ کے ساتھ ڈیبیو کیا تھا۔ اس وقت الیانہ فلم 'بادشاہو' اور ارجن کپور کے ساتھ فلم 'مبارکاں' کی شوٹنگ میں مصروف ہیں۔ حالانکہ الیانہ اپنے کام اور کامیابی سے کافی خوش ہیں لیکن انھیں یہ خوف بھی لگا رہتا ہے کہ یہ دونوں چیزیں کب تک ان کا ساتھ دیں گی اور انڈسٹری میں وہ کتنی دور تک جا سکیں گی۔

بامبے ٹائمز کے ساتھ ایک انٹرویو میں الیانہ نے کہا کہ کبھی کبھی وہ سوچتی ہیں کہ کیا کامیابی کے لیے باصلاحیت ہونا کافی ہے یا پھر با اثر لوگوں کے ساتھ اچھےتعلقات ضروری ہیں۔

یہ جاننے کے لیے الیانہ کو کہیں اور جانے کی ضرورت نہیں بالی وڈ میں ہی اگر وہ اپنی نظریں دوڑائیں گی تو دیکھ پائیں گی کہ تعلقات آپ کو چند فلمیں تو دلوا سکتے ہیں لیکن کامیابی نہیں۔ دیرپا کامیابی کے لیے ٹیلنٹ کا ہونا زیادہ ضروری ہے کیونکہ اگر تعلقات ہی اہم ہوتے تو انڈسٹری کے بڑے بڑے فلم سٹارز کے بچے بیکار نہ گھوم رہے ہوتے۔

سابق حسینہ کائنات اور اداکارہ سشمیتا سین کافی عرصے سے فلموں سے غائب ہیں۔ ان کی آخری بالی وڈ فلم 2010 میں 'نو پرابلم' تھی۔ سشمیتا نے حال ہی میں 65 ویں مس یونیورس مقابلے کو جج کیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption سشمیتا کو ایک اچھی سکرپٹ اور فلسماز کی تلاش ہے

حال ہی میں ایک خبر رساں ادارے کے ساتھ بات چیت میں سشمیتا نے بالی وڈ میں اپنی واپسی کا اشارہ دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ اس طرح واپسی کرنا چاہتی ہیں کہ لوگ دیکھ کر کہیں کہ کیا بات ہے لیکن انھوں ابھی تک یہ نہیں بتایا کہ وہ کب اورکس طرح فلموں کا رخ کریں گی۔

لگتا ہے سشمیتا کو ایک اچھی سکرپٹ اور فلسماز کی تلاش ہے۔ لیکن خیال رہے کہ ان کی واپسی کہیں گوندا جیسی نہ ہو جو اپنی فلم 'آ گیا ہیرو' بنا تو چکے ہیں لیکن ریلیز کرنے سے گھبرا رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption یہ فلم 24 فروری کو ریلیز ہونے والی تھی لیکن فلم 'رنگون' کے سبب اس کی تاریخ آگے بڑھا کر تین مارچ کر دی گئی

یہ فلم 24 فروری کو ریلیز ہونے والی تھی لیکن فلم ’رنگون‘ کے سبب اس کی تاریخ آگے بڑھا کر تین مارچ کر دی گئی۔ اب چونکہ فلم ’کمانڈو‘ بھی اسی تاریخ کو ریلیز ہو رہی ہے تو گوندا نے اب اپنی فلم کی ریلیز کی تاریخ ایک بار پھر بڑھا دی ہے۔ ایک تو گوندا جی پہلے ہی دس سال بعد آ رہے تھے انڈسٹری کے نئے اور نو جوان ہیروز سے گھبرانے والا یہ ہیرو اب پتہ نہیں کب آئے گا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں