آسکرز ایوارڈ 2017: تصاویر میں

تصویر کے کاپی رائٹ Kevin Winter / Getty Images)
Image caption اتوار کی شب آسکرز کی تقریب کے دوران اس وقت دلچسپ صوررتحال پیدا ہوئی جب بہترین فلم کے ایوارڈ کے لیے جیتنے والی فلم مون لائٹ کے نام کی جگہ لا لا لینڈ کے نام کا اعلان کر دیا گیا۔
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption اس غلط فہمی کی وجہ ایوارڈ کا اعلان کرنے والے وارن بیٹی کو دیا جانے والا غلط لفافہ تھا۔
تصویر کے کاپی رائٹ Mark Ralston / AFP
Image caption چند منٹ کی غلط فہمی کے بعد لا لا لینڈ کے پروڈیوسر نے مائیک پر آ کر اعلان کیا کہ ایوارڈ کی فاتح فلم دراصل مون لائٹ ہی ہے
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption بہترین اداکار کا انعام کیسی ایفلیک نے 'مانچسٹر بائی دا سی' میں اداکاری پر حاصل کیا۔ اس ایوارڈ کے لیے ان کا مقابلہ ڈینزل واشنگٹن جیسے منجھے ہوئے اداکار سے تھا
تصویر کے کاپی رائٹ Mark Ralston / AFP
Image caption لا لا لینڈ کو مجموعی طور پر چھ ایوارڈ ملے جن میں ایما سٹون کا بہترین اداکارہ کا ایوارڈ بھی ہے۔ یہ سٹون کا پہلا آسکر ہے۔ وہ اس سے قبل 2015 میں فلم برڈ مین کے لیے بھی نامزد ہوئی تھیں۔
تصویر کے کاپی رائٹ Mark Ralston / AFP
Image caption مہرشالا علی نے فلم مون لائٹ کے لیے بہترین معاون اداکار کا ایوارڈ اپنے نام کیا۔ وہ 2014 کے بعد سے یہ انعام جیتنے والے پہلے سیاہ فام اداکار بنے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Chris Pizzello / Invision / AP
Image caption بہترین معاون اداکارہ کا انعام سیاہ فام اداکارہ وایولا ڈیوس نے جیتا۔ انھوں نے 'فینسز` میں روز نامی کردار کے روپ میں اداکاری کے جوہر دکھائے تھے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption 89ویں آسکرز ایوارڈز کی تقریب لاس اینجلس کے ڈولبی تھیٹر میں منعقد ہوئی
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption گلوکار جسٹن ٹمبرلیک نے تقریب کے آغاز میں آسکر کے لیے نامزد نغمہ ’کانٹ سٹاپ دا فیلنگ‘ گایا۔
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption الیہاندرو برتولازی، جیورجیو گریگورینی اور کرسٹوفر نیلسن کو فلم سوئسائیڈ سکواڈ کے لیے بہترین میک اپ کا ایوارڈ دیا گیا۔
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption کولین ایٹوڈ نے اپنا چوتھا آسکر ایوارڈ ’فینٹاسٹک بیسٹس اینڈ ویئر ٹو فائنڈ دیم‘ کے لیے حاصل کیا۔ اس سے قبل وہ کاسٹیوم ڈیزائن کے لیے 2011 میں ایلس ان ونڈر لینڈ، 2006 میں میموائرز آف گیشا اور 2003 میں شکاگو کے لیے یہ اعزاز جیت چکی ہیں۔
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption تقریب کے شرکا کے لیے مٹھائیوں کے چھوٹے چھوٹے پیکٹ گرائے گئے
تصویر کے کاپی رائٹ Kevin Winter / Getty Images
Image caption بہترین دستاویزی فیچر فلم کا ایوارڈ او جے: میڈ ان امریکہ کو ملا جسے وصول کرنے کے لیے پروڈیوسر کیرولین واٹرلو اور ہدایتکار ایزرا ایڈلمین سٹیج پر آئے
تصویر کے کاپی رائٹ Kevin Winter / Getty Images
Image caption کیون او کونل کو ہیک سا رج کے لیے بہترین ساؤنڈ مکسنگ کا ایوارڈ دیا گیا۔ اس سے قبل وہ 21 مرتبہ آسکرز کے لیے نامزد ہوئے تھے تاہم یہ ان کا پہلا ایوارڈ ہے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption میزبان جمی کمیل نے تقریب کے دوران فلم لائن کے اداکار سنی پوار کو گود میں اٹھا لیا
تصویر کے کاپی رائٹ Frazer Harrison / Getty Images)
Image caption بہترین اینیمیٹڈ فیچر فلم کا ایوارڈ زوٹوپیا کے حصے میں آیا
تصویر کے کاپی رائٹ Chris Pizzello / Invision / AP
Image caption فلم بیک ٹو فیوچر کو یاد کرنے کے لیے مائیکل جے فوکس اور سیتھ روگن اس فلم کی مشہور کار ڈیلوریئن میں بیٹھ کر سٹیج پر آئے
تصویر کے کاپی رائٹ Mark Ralston / AFP
Image caption بہترین مختصر دستاویزی فلم کا ایوارڈ وائٹ ہیلمٹس کو دیا گیا۔ یہ فلم شام میں فضائی حملوں کے بعد امدادی کارروائیاں کرنے والے افراد کے بارے میں ہے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Lucy Nicholson / Reuters
Image caption ہر سال کی طرح اس بار بھی گذشتہ برس کے دوران انتقال کر جانے والے اداکاروں، ہدایتکاروں اور پروڈیوسرز کے نام تقریب کے دوران سکرین پر دکھائے گئے

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں