فلم ساز مہیش بھٹ کو ’بھتے‘ کے لیے دھمکی

عالیہ بھٹ تصویر کے کاپی رائٹ ROHAN SHRESTHA
Image caption پولیس کے مطابق دھمکی دینے والے شخض نے عالیہ بھٹ کو مارنے کی بات کہی

بالی وڈ کے فلم ساز مہیش بھٹ کو مبینہ طور پر ایک نامعلوم شخص نے 'بھتے' اور ان کی بیٹی اداکارہ عالیہ بھٹ کو مارنے کی دھمکی دی۔

انڈین خبر رساں ادارے پی ٹی آئی کے مطابق اس بارے میں جبری وصولی کے خلاف سرگرم ممبئی کے محکمہ پولیس میں شکایت درج کی گئی ہے۔ اور کرائم برانچ کا محکمہ اس معاملے کی چھان بین کر رہا ہے۔

پی ٹی آئی کے مطابق ممبئی پولیس کے ڈپٹی کمشنر اشوک دودھے نے بتایا ہے کہ ریاست اتر پردیش کے ایک نامعلوم شخص نے حال ہی میں مہیش بھٹ کو فون کیا تھا اور واٹس ایپ پر 50 لاکھ روپے کا مطالبہ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ PARULL GOSSAIN PR
Image caption مہیش بھٹ نے اس بارے میں ایک ٹویٹ کیا اور پولیس کی فوری کارروائی کے لیے شکریہ ادا کیا

پولیس کے مطابق اس شخص نے مہیش بھٹ کی بیٹی اداکارہ عالیہ بھٹ کو بھی مارنے کی دھمکی دی۔

مہیش بھٹ نے اس بارے میں ایک ٹویٹ کیا اور پولیس کی فوری کارروائی کے لیے شکریہ ادا کیا ہے۔

انہوں نے لکھا: ’جبری وصولی کے لیے میرے خاندان کو ملنے والی دھمکی سے میں حیرت زدہ رہ گيا تھا جسے مہاراشٹر اور ممبئی پولیس نے اپنی مشترکہ کوششوں سے شروع ہی میں کنٹرول کر لیا۔ ان کے شکرگزار ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter
Image caption مہیش بھٹ کی ٹویٹ

فلم ساز مہیش بھٹ کا شمار بالی کے لبرل خيال والے لوگوں میں ہوتا ہے اور دائیں بازو کی حامل ہندو تنظیمیں انھیں اکثر اپنا نشانہ بناتی رہتی ہیں۔

گذشتہ سال بھی سخت گیر ہندو تنظیم 'مہاراشٹر نو نرمان سینا' نے مہیش بھٹ سے کہا تھا کہ انھیں اپنی فلموں میں پاکستانی فنکاروں کو نہیں لینا چاہیے۔ تنظیم نے اس حکم نامے کی خلاف ورزی کی صورت میں انھیں مارنے پیٹنے کی دھمکی دی تھی۔

اس تنظیم نے اس حوالے سے کرن جوہر سمیت بعض دیگر افراد کو بھی ایسی ہی دھمکیاں دی تھیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں