راک اینڈ رول لیجنڈ چک بیری چل بسے، خراج عقیدت پیش کرنے کا سلسلہ جاری

چک بیری تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption چک بیری امریکی ریاست مسوری میں 18 اکتوبر سنہ 1926 کو پیدا ہوئے

راک اینڈ رول کے لیجنڈ کہلائے جانے والے امریکی موسیقار اور گلوکار چک بیری کی موت کے بعد دنیائے موسیقی سے انھیں خراج عقیدت پیش کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔

چک بیری کا گذشتہ روز 90 سال کی عمر میں مسوری ریاست میں انتقال ہو گیا۔ ان کا کریئر سات دہائیوں پر مشتمل تھا۔

امریکی گلوکار اور نغمہ نگار بروس سپرنگسٹین نے کہا وہ ’آج تک کے خالص راک این رول کے عظیم ترین مصنف تھے۔‘

جبکہ رولنگ سٹون کے مائک جیگر نے کہا ’بیری نے ہماری جوانی کے برسوں کو روشن کیا، انھوں نے ہمارے خوابوں میں زندگی بھردی کہ ہم موسیقار اور فنکار بن سکیں۔‘

ان کو راک اینڈ رول کے بانی کے طور پر یاد کیا جاتا ہے اور انھوں نے آنے والی کئی نسلوں کو متاثر کیا جن میں بیٹلز، رولنگ سٹون، اور بیچ بوائز شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption چک بیری کے مجسمے کے پاس لوگ پھول پیش کرکے اپنی عقیدات کا اظہار کر رہے ہیں

بیٹلز کے ڈرمر رنگو سٹار نے بیری کے نغمے کا ایک مصرع نقل کرتے ہوئے انھیں خراج عقیدت پیش کیا جس کا مطلب تھا ’مجھے تھوڑی راک اینڈ رول موسیقی سننے دو چاہے وہ اسے تم نے کسی پرانے طرز پر ہی کیوں نہ استعمال کرو۔‘

انھوں نے لکھا کہ وہ بیری سنہ 1961 کے گیت 'آئی ایم ٹاکنگ اباؤٹ یو' بجا رہا ہوں جسے بیٹلز نے بی بی سی میں سنہ 1963 میں ریکارڈ کیا تھا۔

گلوکار اور نغمہ نگار ہیو لیوس نے انھیں ’راک اینڈ رول کی دنیا کی شاید سب سے اہم شخصیت‘ کے طور پر یاد کیا۔

انھوں نے لکھا: ’ان کا میوزک اور ان کے اثرات ابد تک قائم رہیں گے۔‘

راک گلوکارہ ایلس کوپر نے ٹویٹ کیا ’بیری راک اینڈ رول کی عظیم آواز کی ابتدا ہیں۔ اور راک کی دنیا نے اپنا والد کھو دیا ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Rex Features
Image caption ان کا کریئر سات دہائیوں پر مشتمل تھا

بیری کا مارکہ چار تاروں والا گٹار تھا جس کے لیے انھیں یاد کیا جاتا ہے اور ان کے نغموں کے بول میں سنہ 1950 کی دہائی کے نوجوانوں کی بغاوت تھی۔

ان کے مقبول ترین نغموں میں 'جانی بی گوڈی'، 'رول اوور بیتھوون' اور 'سوئیٹ لٹل سکسٹین' شامل ہیں۔ انھیں سنہ 1984 میں گریمی کے لائف ٹائم ایوارڈ سے نوازا گیا اور راک این رول کے ہال آف فیم میں شامل ہونے والے وہ اولین گلوکاروں میں شامل رہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں