فاسٹ اینڈ فیوریئس سیریز کی نئی فلم کا باکس آفس پر نیا ریکارڈ

فلم تصویر کے کاپی رائٹ AFP

فاسٹ اینڈ فیوریئس فرینچائز کی آٹھویں فلم 'فیٹ آف دی فیوریئس' نے ٹکٹوں کی فروخت سے آمدن کے حوالے سے باکس آفس پر نیا ریکارڈ قائم کر دیا ہے۔

اس فلم نے ایسٹر کی ہفتہ وار چھٹی کے تین دن میں مجموعی طور پر دنیا بھر میں 53 کروڑ ڈالر کا کاروبار کیا ہے۔

فلم ریلیز ہونے کے بعد پہلی ہفتہ وار چھٹی پر سب سے زیادہ رقم کمانے والی فلم کا ریکارڈ اس سے پہلے سٹار وارز : دی فورس اویکنز کے پاس تھا جس نے 52 کروڑ ڈالر کمائے تھے۔

فاسٹ اینڈ فیوریس: 17 دنوں میں ایک ارب ڈالر

پال واکر آنجہانی دولت مند ستاروں کی فہرست میں

لیکن امریکہ میں فلم فیٹ آف دی فیوریئس کی شروعات اتنی اچھی نہیں تھیں جتنی اس فرینچائز کی سابقہ فلموں کی رہی ہے۔

2015 میں ریلیز ہونے والی فیوریئس 7 نے 14 کروڑ ڈالر کمائے تھے جبکہ موجودہ فیوریئس 8 نے صرف 10 کروڑ ڈالر کا کاروبار کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اداکارہ شارلیز تھیرون

کم آمدنی کے باوجود امریکی باکس آفس پر فیٹ آف دی فیوریئس کی آمدنی اس ہفتہ وار چھٹی پر ہونے والی مجموعی آمدنی کا دو تہائی حصہ تھی۔

فیٹ آف دی فیوریئس کے بعد دوسرے نمبر پر باس بے بی تھی جس نے ڈیڑھ کروڑ ڈالر کا کاروبار کیا۔

فاسٹ اینڈ فیورئیس فرینچائز سنہ 2001 میں شروع ہونے والی ایکشن سے بھرپور فلموں کی سیریز ہے جس میں فلم کی کہانی گاڑیوں کی ریسنگ اور ان کے تعاقب، اور کامیاب ڈاکے ڈالنے کے گرد گھومتی ہے۔

فیٹ آف دی فیوریئس کی سب سے زیادہ آمدنی چین میں ہوئی جہاں تین دن میں فلم نے 19 کروڑ ڈالر کا کاروبار کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اداکار ون ڈیزل

اس فرینچائیز کی ہر فلم میں کام کرنے والے اداکار وین ڈیزل نے کہا کہ وہ ’بہت شکرگزار اور احسان مند‘ ہیں اور اس کامیابی سے خود کو بہت خوش قسمت سمجھتے ہیں۔'

فیٹ آف دی فیوریئس میں وین ڈیزل کے علاوہ شارلیز تھیرون، ٹائیریز گبسن اور لوڈاکرس نے بھی اداکاری کے جوہر دکھائے ہیں۔ اس فرینچائز کی مزید دو فلمیں 2019 اور 2021 میں ریلیز کی جائیں گی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں