’ماہ میر‘ کے لیے انڈیا میں بہترین فلم کا اعزاز

انڈیا
Image caption ہرشا نارائن نے ماہ میر کی ٹیم کی جانب سے ایوارڈز وصول کیے

پاکستانی فلم ماہ میر نے دہلی میں ہونے والے دادا صاحب فلم فیسٹیول میں بہترین فلم اور بہترین موسیقی کے ایوارڈ جیت لیے ہیں۔

بھارت میں پاکستان اور بھارت کے درمیان امن کے لیے کام کر نے والے ہرش نارائن نے ماہ میر کی ٹیم کی جانب سے یہ ایوارڈز وصول کیے ۔

ماہ میر ہم فلمز کی جانب سے بنائی گئی تھی جس کے پیش کار بدر اکرام تھے۔

فلم کے ہدایتکار انجم شہزاد نے بی بی سی سے گفتگو کر تے ہوئے بتایا کہ انہیں بہت خوشی ہے کہ یہ ایوارڈ میر کی دلی سے آیا ہے اور ’یہ ہم سب کے لیے فخر کی بات ہے۔‘

انھوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ آنے والے دنوں میں چیزیں بہتر ہوں گی اور وہ بھارت میں اپنے دوستوں کے ساتھ کام کر سکیں گے۔

فلم کے ہدایتکار انجم شہزاد نے مزید کہا کہ آج تک میر تقی میر پر فلم نہیں بنی تھی۔ ’اس فلم کا مقصد پیسے کمانا نہیں تھا بلکہ پاکستانی کام دنیا کو دکھانا تھا اور یہ مقصد پورا ہو گیا ہے۔‘

'بھارت میں ان حالات میں پاکستانی فلم کو ایوارڈ ملنا اس بات کا ثبوت ہے کہ فن روکا نہیں جاسکتا ۔ یہ کامیابی فن کی کامیابی ہے۔'

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اسے اگرچہ ایوارڈ نہیں مل سکا اور صرف ہم ٹی وی نے اپنے ایوارڈز میں اسے ستائشی ایوارڈ دیا تاہم اس سے فرق نہیں پڑتا۔

ماہ میر ایک نوجوان جمال کی کہانی ہے جو موجودہ دور میں میر کی وحشت کو سمجھنے کی کوشش میں خود اس کا شکار ہو جاتا ہے ۔ یہ عشق ، جدائی ، روایت اور غریت سے بغاوت کی کہانی ہے ۔

ماہ میر گذشتہ سال مئی میں ریلیز کی گئی تھی اور اسے ناقدین کی جانب سے بہت پزیرائی ملی تھی ۔ یہ فلم پاکستان کی جانب سے بہترین غیر ملکی فلم کے شعبے میں آسکر ایوارڈ کیلئے بھی نامزد کی گئی تھی ۔

فلم نے گذشتہ برس گوام انٹرنیشنل ایوارڈ بھی اپنے نام کیا تھا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں