جسٹن بیبرکے پانچ تنازعات

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

عمر 23 سال، گریمی ایوارڈ اور لاکھوں کروڑوں چاہنے والے، دنیا کی مشہور ترین شخصیات کی فہرست میں جگہ رکھنے والے نوجوان گلوکار جسٹن بیبر دنیا بھر میں چھا چکے ہیں۔

لیکن اس کے ساتھ ہی تنازعات سے بھی ان کا پرانا تعلق رہا ہے۔ ایسی ہی کچھ واقعات پر ایک نظر۔

٭’جسٹن بیبر کے بہروپیے‘ پر نو سو سے زائد مقدمات

٭’نشے میں ڈرائیونگ کی سزا جسٹن بیئبر کا ڈانس‘

چہرے پر تھوک

جولائی 2013 میں جسٹن بیبر پر اپنے ہوٹل کی بالکنی سے نیچے کھڑے ہوئے شائقین پر تھوکنے کا الزام لگا تھا۔ تاہم، انھوں نے اس بات سے انکار کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

این فرینک پر متنازع بیان

سال 2013 میں ہی نیدرلینڈ میں اپنے کنسرٹ سے پہلے جسٹن بیبر اپنے دوستوں کے ساتھ 'دی این فرینک ہاؤس' گئے تھے۔ وہاں انھوں نے 'مہمان کتاب' میں لكھا ’یہاں آ کر بہت متاثر ہوا ہوں، این عظیم لڑکی تھی، امید ہے کہ وہ بلائبر تھی۔‘ بلائبر کی اصطلاح جسٹن کے مداحوں کے لیے استعمال ہوتی ہے۔

جب نشے میں ہوش کھو بیٹھے

ایک بار بیبر نے نشے کی حالت میں ہوٹل کی 'صفائی والی بالٹی' میں پیشاب کیا. یہ حرکت ہوٹل کی لابی میں لگے ہوئے کیمرے میں بھی قید ہوئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

پڑوسی کے گھر انڈے پھینکے

سال 2014 میں جب بیبر 20 سال کے تھے تو کیلی فورنیا میں بیبر پر اپنے پڑوسی کے گھر پہ انڈے پھینکنے اور گالم گلوچ کرنے کے الزام لگے۔ بعد میں پولیس نے ان کے گھر کی تلاشی لی اور ان کے خلاف ثبوت حاصل کرنے کی کوشش کی۔

ویل چیئر کا استعمال

سال 2014 میں جب بیبر ڈزنی ورلڈ گئے تو لائن میں کھڑے نہ ہونے کے لیے انھوں نے ویل چیئر کا استعمال کیا اور کہا، ’میں لائن نہیں بناتا‘۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں