ڈزنی کی فلم چوری، ہیکروں کا تاوان کا مطالبہ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

فلم سٹوڈیو ڈزنی نے کہا ہے کہ ہیکرز نے انھیں دھمکی دی ہے کہ اگر وہ تاوان ادا نہیں کریں گے تو ان کی آنے والی ایک فلم کو ریلیز کر دیا جائے گا۔

’برٹنی سپیئرز زندہ ہیں،‘ سونی کی معافی

٭ہالی وڈ میں ہٹ، بالی وڈ میں فلاپ

ہالی وڈ کے ایک رپورٹر کے مطابق ڈزنی کے سی ای او باب ایگر نے اے بی سی کے ملازمین کو ہیکرز کے مطالبات کے بارے میں ٹاؤن ہال میں پیر کو ہونے والی میٹنگ کے دوران بتایا۔

انھوں نے اس فلم کا نام نہیں بتایا ڈیڈ لائن کی رپورٹ کے مطابق پائریٹس آف کریبین کی اگلی فلم ’ڈیڈ مین ٹیل نو ٹیلز‘ ہے۔

ڈیزنی کے سی ای او کا کہنا ہے کہ انھوں نے تاوان ادا کرنے سے انکار کر دیا ہے اور سٹوڈیو وفاقی تحقیقاتی اداروں کے ساتھ کام کر رہا ہے۔

ہیکرز نے تاوان کی رقم بٹ کوائن میں ادا کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور ایسا نہ کرنے کی صورت میں فلم کو 20، 20 منٹ کی قسطوں کی صورت میں ریلیز کرنے کی دھمکی دی ہے۔

خیال رہے کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب کسی فلم کو آن لائن ریلیز کرنے کی دھمکی ملی ہو۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

گذشتہ ماہ جب نیٹ فلیکس نے بھی تاوان ادا کرنے سے انکار کیا تھا تو ہیکروں کے ایک گروپ نے اورنج از دا نیو بلیک کے پانچویں سیزن کو آن لائن اپ لوڈ کر دیا تھا۔

ڈیڈ مین ٹیلز نو ٹیلز امریکی سینیماؤں میں 26 مئی کو ریلیز ہونے والی ہے۔

آئی ٹی سکیورٹی کمپنی، ای ایس ای ٹی سے وابستہ ماہر مارک جیمز کہتے ہیں کہ کوئی بھی چیز جو کہ اہم ہو چاہے ڈیجیٹل ہو یا فیزیکل اس کے چوری ہونے کا ہمیشہ امکان ہوتا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں