ڈسپینسر پھٹنے سے فرانسیسی بلاگر ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ REBECCA BURGER

فرانس کی ایک معروف بلاگر کریم کو پھینٹے کے لیے استعمال ہونے والے ڈسپینسر کے پھٹنے سے ہلاک ہو گئی ہیں۔

ربیکا برگر کی ہلاکت کی خبر فیس بک پر ان کے خاندان کی جانب سے دی گئی۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ان کی ہلاکت گھر میں ہونے والے حادثے کے نتیجے میں ہوئی ہے۔

* دنیا کی 9 ناکام ترین مصنوعات

فیس بک کے علاوہ انسٹا گرام اکاؤنٹ پر بھی ایک تنبیہی پیغام دیا گیا ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ ربیکا کی موت کی وجہ ڈسپینسر کے پھٹ کر ان کے سینے سے ٹکرانے کے نتیجے میں ہوئی۔

فرانسیسی میڈیا کا کہنا ہے کہ ربیکا کو طبی امداد تو دی گئی تاہم دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے ان کی موت واقع ہوگئی۔

ربیکا فرانس میں فٹنس اور سیاحت کے حوالے سے ایک جانی پہچانی شخصیت تھیں۔ فیس بک پر ان کے مداحواں کی تعداد 55 ہزار جب انسٹا گرام پر ڈیڑھ کروڑ سے اوپر تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ INSTAGRAM

ان کے ایک عزیز کی جانب سے انسٹا گرام پر پیغام دیا گیا کہ کریم ڈسپینسر کے استعمال سے اجتناب کیا جائے کیونکہ اب بھی مارکیٹ میں بہت سے خراب ڈسپینسر موجود ہیں۔

یہ مخصوص ڈسپینسر دھات کے ایک کنٹینر پر مشتمل ہوتا ہے جو اس کے اندر بھری گیس کی مدد سے کام کرتا ہے جس میں کے اندر بہت پریشر ہوتا ہے۔

فرانس میں صارفین کا ایک گروہ سالوں سے ان خراب ڈسپینسر کے استعمال سے خبردار کرتا رہا ہے۔

میگزین 60 ملین کے مطابق سنہ 2015 میں بننے والے ڈسپینسر نسبتاً محفوظ نظر آئے تاہم اس سے قبل ان کی وجہ سے ہونے والے حادثات میں کئی افراد کی آنکھیں ضائع ہوئیں، دانت ٹوٹ گئے یا ان کی ہڈی فریکچر ہو گئی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں