جسٹن بیبر کا ورلڈ ٹور وقت سے پہلے ختم

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

معروف پاپ سنگر جسٹن بیبر نے 'غیر متوقع حالات' کی وجہ سے اپنے ورلڈ ٹور کے باقی ماندہ شوز کو منسوخ کر دیا ہے۔

انھوں نے آئندہ تین ماہ تک شمالی امریکہ اور ایشیا میں 14 مزید شوز کرنے تھے۔

بیبرورلڈ ٹور کے دوران اب تک اپنی سنہ 2015 میں ریلیز ہونے والی البم 'پرپز' کے 150شوز کر چکے ہیں۔ انھوں نے ان شوز کا آغاز مارچ 2016 میں کیا تھا۔

'تھینک يو انڈیا، میں پھر آؤں گا'

جسٹن بیبر کے پانچ تنازعات

اس ٹور سے انھوں نے سنہ 2017 کے پہلے نصف حصے میں تیرانوے کروڑ 20 لاکھ امریکی ڈالر کمائے اور ان کے ہر شو میں 40 ہزار ٹکٹیں فروخت ہوئیں۔

جسٹن کی جانب سے سوشل میڈیا پر اس فیصلے کے بارے میں کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا تاہم ان کی ویب سائٹ پر یہ پیغام موجود ہے کہ 'جسٹن اپنے مداحوں کو پیار کرتے ہیں اور انھیں مایوس کرنے والوں سے نفرت کرتے ہیں۔'

پیغام میں یہ بھی لکھا گیا ہے کہ وہ گذشتہ 18 ماہ کے دوران پرپز ورلڈ ٹور کے حوالے سے غیر معمولی تجربات کے لیے بھی اپنے مداحوں کے شکرگزار ہیں۔

انھوں نے دنیا کے چھ براعظموں میں 150 کامیاب شوز کے انعقاد پر اپنی ٹیم کو بھی شکریہ ادا کیا۔

پیغام کے اختتام میں کہا گیا ہے کہ بہت احتیاط سے جائزہ لینے کے بعد جسٹن نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ آنے والی تاریخوں میں پرفارم نہیں کریں گے۔ ٹکٹوں کے پیسے انھیں خریدنے کے مقامات پر واپس لوٹا دیے جائیں گے۔ ’

آئندہ دنوں میں انھوں نے امریکہ کے علاوہ جاپان، ہانگ کانگ، سنگا پور اور انڈونیشیا میں بھی پرفارم کرنا تھا۔

خیال رہے کہ جسٹن نے چین میں بھی پرفارم کرنا تھا تاہم گذشتہ دنوں چینی حکام نے یہ کہہ کر ان پر پابندی عائد کر دی تھی کہ وہ ’برے اخلاق‘کے حامل ہیں۔

اسی بارے میں