لفٹ مین نے غلط طریقے سے چھوا تھا: اکشے

اکشے کمار اور اداکارہ بھومی پڈنیکر تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

بالی وڈ کے سپر سٹار اکشے کمار نے ممبئی میں انسانوں کی سمگلِنگ پر ہونے والی ایک کانفرنس میں شرکت کے دوران کہا کہ بچوں اور ماں باپ کے درمیان بات چیت کا فقدان بچوں کے لیے خطرناک ہو سکتا ہے۔

بچوں کو درپیش خطرات کا حوالہ دیتے ہوئے اکشے نے اپنی ہی زندگی کا ایک واقعہ بیان کیا کہ کس طرح ان کے بچپن میں ایک مرتبہ ان کے لفٹ مین نے انھیں غلط طریقے سے چھوا تھا۔

اکشے کا کہنا تھا کہ چونکہ ان کے اور ان کے والدین کے درمیان ہر موضوع پر کھل کر بات ہوتی تھی اس لیے انھوں نے بے جھجھک اپنے والدین کو اس واقعہ کے بارے میں بتایا۔

'بولے چوڑیاں بولے کنگنا'

سلمان خان کو صرف ایک تاریخ یاد رہتی ہے

لیکن عموماً بچے والدین کے ساتھ اس طرح کی گفتگو سے گھبراتے ہیں یا ان باتوں کو چھپا جاتے ہیں جس کے سبب بچوں کو جنسی طور پر حراساں کرنے والوں کا حوصلہ بڑھتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اکشے کمار فلم ٹوائلٹ کے پروموشن کے دوران

اکشے نے اپنی زندگی کے اس واقعہ کو بتا کر بچوں میں بیداری اور حوصلہ پیدا کرنے کی کوشش کی ہے لیکن یہ عجیب بات ہے کہ اس طرح کے بڑے ستاروں کو ایسے واقعات کی یاد صرف اپنی فلم کی ریلیز سے پہلے ہی کیوں ستاتی ہے۔ اکشے کی فلم 'ٹوائلٹ ایک پریم کتھا' جلد ہی ریلیز ہونے والی ہے۔

فلم کا موضوع اچھا ہے اور ٹریلر دیکھ کر اندازہ ہوتا ہے کہ فلم میں انڈیا کے ایک اہم موضوع یا مسئلے کو اجاگر کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ عالمی تنظیم صحت کے مطابق انڈیا کی آدھی سے زیادہ آبادی کے پاس ٹوائلٹ کی سہولت نہیں ہے اور اس صورت حال میں لوگوں اور خاں طور پر خواتین کو جس طرح کے مسائل کا سامنا ہوتا ہے وہ اس فلم کامرکزی خیال ہے۔

عالمی حدت پر فلم

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

اس وقت انڈین سنیما نے ایسے ہی اہم موضوعات پر کام کرنا شروع کیا ہے۔ ایسی ہی ایک فلم عالمی حدت کے سنگین موضوع پر بنائی گئی ہے۔ نواز الدین صدیقی اور پراچی ڈیسائی کی اس فلم کا نام ہے 'کاربن'۔

فلم کے نام سے ہی ظاہر کہ اس میں عالمی حدت اور دنیا پر اس کے خطرناک اثرات کو دکھانے کی کوشش کی گئی ہے کہ اگر آج کچھ نہ کیا گیا تو انسان کو کس طرح کی زندگی اور حالات کا سامنا ہو گا۔

فلمساز جیکی بھگنانی نے اس فلم کا ٹریلر 13 جولائی کو نیو یارک میں ہونے والے آئیفا ایوارڈز میں جاری کرتے ہوئے کہا 'اس دنیا کا باسی ہونے کے ناطے یہ میری ذمہ داری ہے کہ میں ماحولیات میں آنے والی تبدیلیوں اور عالمی حدت کے سبب پیدا ہونے والے خطرات سے لوگوں کو آگاہ کروں اور بطور فلمساز میرے خیال میں فلم اس کا سب سے اچھا ذریعہ ہے۔'

کاش نیویارک میں ہونے والے اس شو میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھی ہوتے جنھوں نے عالمی حدت کو کم کرنے کے عالمی فنڈز میں کٹوتی کا اعلان کیا ہے!

غیر ذمہ دار ہدایت کار

تصویر کے کاپی رائٹ AFP/Getty Images

رنبیر کپور کے پاپا رشی کپور ایک بار پھر ٹوئٹر پر سرگرم ہوئے اور اس بار ان کا نشانہ 'جگا جاسوس' کے ڈائریکٹر انوراگ باسو تھے۔ رشی کپور نے انوراگ باسو کو ایک غیر ذمہ دار ہدایت کار کہا۔

دراصل 'جگا جاسوس' باکس آفس پر بری طرح فلاپ ہوئی ہے اور رنبیر بھی اس کے پروڈیوسروں میں سے ایک تھے۔ رشی کا کہنا تھا کہ انوراگ نے فلم بنانے میں انتہائی غیر ذمہ داری کا ثبوت دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ انوراگ فلم کی ریلیز سے دو دن پہلے تک فلم کی مکسنگ میں مصروف تھے اور انھوں نے فلم ریلیز سے صرف ایک دن پہلے دیکھی۔

بحرحال انوراگ نے اس بارے میں کوئی ردِ عمل ظاہر کرنے سے انکار کیا جو 'گینگسٹر'، 'لائف ان میٹرو' اور 'برفی' جیسی فلمیں بنا چکے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں