پریا وریئر کو 26 سیکنڈ کے ویڈیو کلپ نے کروڑوں دلوں کی دھڑکن بنا دیا

پریا وریئر تصویر کے کاپی رائٹ YouTube

انڈیا میں 26 سیکنڈ کے ایک ویڈیو کلپ نے جنوبی ہند کی ریاست کیرالہ کی ایک لڑکی پریا وریئر کو ملک بھر کے نوجوانوں کی ڈریم گرل بنا دیا ہے۔

اس کلپ میں نادانیاں، شوخیاں، معصومیت، شرارت اور محبت سب ایک ساتھ ہے۔ شاید غالب نے کسی ایسی ہی دوشیرہ کے لیے یہ شعر کہا ہو:

بلائے جاں ہے غالب اس کی ہر بات

عبارت کیا، اشارت کیا، ادا کیا

کیا آپ بتا سکتے ہیں کہ جس ویڈیو پر نوجوان اس قدر فدا ہیں اسے بنانے کی تیاری کیسے ہوئی اور اس میں کتنا وقت لگا؟

اس کا جواب پریا نے خود دیا۔

بی بی سی ہندی کے ساتھ خصوصی بات چیت میں انھوں نے کہا: ’ڈائریکٹر نے مجھ سے آن دا سپاٹ کچھ دل لبھانے والی کیوٹ سی ادا کرنے کے لیے کہا تھا۔‘

اس کے لیے کتنے ٹیک دینے پڑے؟

اس کے جواب میں پریا نے کہا: میں نے ایک ہی بار کوشش کی اور ایک ہی شاٹ میں یہ اوکے ہو گیا۔ لیکن یہ خیال نہیں آیا تھا کہ یہ اتنا وائرل ہو جائے گا۔

پریا نے کہا کہ 'اس کا سارا کریڈٹ ڈائریکٹر کو جاتا ہے۔ یہ جادو انھوں نے ہی کیا ہے۔ انھوں نے مجھے بتایا کہ کیا انداز دکھانا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Instagram

’اس کے لیے میں نے کوئی مشق نہیں کی تھی اور جو ہوا بس آن دا سپاٹ ہو گيا۔ شاٹ کے بعد سب نے کہا کہ اچھا ہوا لیکن یہ پتہ نہیں تھا کہ اتنا اچھا ہوا ہے۔'

اس ویڈیو کے کئی سپوف بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہوئے ہیں جو شرارت انگیز انداز میں بنائے گئے ہیں اور پریا ان سے بھی خوش ہیں۔

انھوں نے کہا کہ 'بہت سارے ٹرولز آئے ہیں اور وہ بہت اچھے ہیں۔ بڑی معروف شخصیات کے ساتھ ٹرولز بن رہے ہیں، مجھے بہت اچھا لگ رہا ہے۔'

پریہ کیرالہ کے ضلعے تریچور میں رہتی ہیں اور ان کے والد سینٹرل ایکسائز میں کام کرتے ہیں۔ پریا کی ماں ایک گھریلو خاتون ہیں جبکہ اس کے خاندان میں ایک چھوٹا بھائی اور ان کی دادا دادی بھی ہیں۔

وہ اس وقت مقامی کالج سے بی کام کر رہی ہیں اور یہ ان کی پہلی فلم ہے۔ اس سے پہلے وہ تین مختصر فلموں میں کام کر چکی ہیں اور انھیں اداکاری کا شوق پہلے سے ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Instagram

بالی وڈ میں کون پسند ہے؟

پریا نے بتایا: 'یہ فلم میرے لیے بہت اچھا موقع تھا اور میں نے اس کا فائدہ اٹھایا۔ اب، فلم آنے کے بعد ایسی ہی قسمت اور حمایت کی ضرورت ہے۔‘

کیا وہ بالی وڈ میں جانا چاہتی ہیں۔ اس کے جواب میں انھوں نے کہا: 'مجھے ہر زبان میں کوشش کرنا ہے اور بالی وڈ میں تو یقیناً جانا ہے۔'

ان کی خواہش ہے کہ سنجے لیلا بھنسالی کی فلم میں انھیں کام کرنے کا موقع ملے۔ اس کے علاوہ انھیں دیپکا پاڈوکون سے بھی ملنے کی خواہش ہے۔

اگر وہ ہندی فلموں میں کام کرتی ہیں تو کس اداکار کے ساتھ فلم کرنا پسند کریں گی۔ انھوں نے جواب دیا: 'رنویر سنگھ، شاہ رخ خان یا پھر سدھارتھ ملہوترا۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ youtube
Image caption اس ویڈیو میں پریا کے ساتھ روشن نظر آ رہے ہیں

ویلنٹائن کون ہے؟

ان کی ویڈیو ویلنٹائن ڈے سے قبل وائرل ہوئی ہے اور جب ان سے پوچھا گیا کہ ان کا ویلنٹائن کون ہوگا تو انھوں نے کہا: 'روشن'

روشن سے ان کی مراد روشن عبدالرؤف ہیں جو ان کے ساتھ ویڈیو میں نظر آ رہے ہیں۔ بہرحال انھوں نے واضح کیا کہ اصل زندگی میں ان کا ابھی کوئی ویلنٹائن نہیں ہے۔

ایک اچھے لڑکے کی خصوصیت کیا ہو سکتی ہے، اس کے جواب میں انھوں نے کہا: 'لوونگ، کیئرنگ اور سپورٹنگ' یعنی محبت کرنے والا، خیال رکھنے والا اور تعاون کرنے والا ہو۔

18 سالہ پریا کلاسیکی رقص کی تعلیم حاصل کر چکی ہیں اور اب موسیقی کا مطالعہ کررہی ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ انھیں تعلیم بھی جاری رکھنی ہے اور فلمیں بھی کرنی ہیں۔ یہ حیران کن ہے کہ اس طرح کے انداز کا مظاہرہ کرنے والی پریا نے اداکاری کی کوئی کلاس نہیں لی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Instagram

آپ حقیقی زندگی میں کیسی ہیں؟

انھوں نے کہا: 'میں اس قسم کے آغاز سے بہت خوش ہوں لیکن مجھے یہ سمجھ نہیں آ رہا کہ اس کا اظہار کیسے کروں۔ میرے دوست بھی بہت خوش ہیں۔'

پریا کو سیر و سیاحت کے ساتھ نغمے بھی اچھے لگتے ہیں۔

اور پریا حقیقی زندگی میں کیسی ہیں؟ اس سوال کے جواب میں انھوں نے کہا: دونوں پریا ایک سی ہی ہیں۔ میں ویسے بھی شرارتی ہوں اور بہت شرارت کرتی ہوں۔'

ان کے مطابق اس ویڈیو پر ان کے والدین بھی مطمئن اور خوش ہیں لیکن اس پر ان کا کیا ردعمل ہو انھیں معلوم نہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Instagram

پریا خوش بھی ہیں اور حیران بھی کہ انھیں ہندی زبان والے علاقے میں اس قدر پسند کیا جا رہا ہے اور وہ کہتی ہیں کہ جب وہ بالی وڈ جائيں تو انھیں اسی طرح کی محبت کی توقع ہے۔

ملیالم اور تمل کے علاوہ وہ ہندی زبان میں بھی گفتگو کر سکتی ہیں اور اس کا سہرا وہ ممبئی کو دیتی ہیں۔

وہ کہتی ہیں: 'میں بمبئی میں رہ چکی ہوں کیونکہ میرے والد وہیں کام کرتے تھے۔ ہم پانچ سال تک وہاں رہے اور وہی ہندی اب تک کام آ رہی ہے۔‘

اسی بارے میں