نیویارک فلم اکیڈمی بھارت میں

ہندوستانی فلم کا ایک منظر تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption نیویارک فلم اکیڈمی پہلے سے ہی بھارت میں فلم ورکشاپ کرتی ہے

نیویارک فلم اکیڈمی جلد ہی بھارت میں ایک فلم سکول کھولنے والی ہے جہاں وہ بھارتی فلم سٹوڈنٹس کو فلم بنانے کا ہنر سکھائے گی۔

نیویارک اکیڈمی کے اس فیصلے کو بھارت کی فلم مارکیٹ کے فروغ کے پس منظر میں دیکھا جا رہا ہے۔

نیویارک فلم اکیڈمی پہلے سے ہی ممبئی میں فلم بنانے کے مختلف پہلوؤں پر ورکشاپ کا انعقاد کرتی ہے لیکن یہ پہلی بار ہے کہ وہ بھارتی فلم بازار میں سرمایہ کاری کر رہی ہے۔

نیویارک فلم اکیڈمی کی اہلکار کِٹّی کُو کا کہنا ہے ’ہم فلم میکرز کی ایک نئی نسل پیش کرنا چاہتے ہیں‘۔

اس بارے میں ہندوستان کے بعض اداکار اور ہدایت کار کا ماننا ہے کہ اس طرح کا قدم اور اس طرح کا مقابلہ بہت پہلے ہوجانا چاہیے تھے۔

عالمی مقبولیت یافتہ ہندوستانی اداکار اوم پوری کا کہنا ہے ’اگر نیویارک فلم اکیڈمی ہندوستان آتی ہے اور طلباء کو فلم بنانے کے گُر سکھاتے ہیں تو اس سے بہت فائدہ ہوگا کیونکہ ہالی وڈ کے ہنر کی ہندوستان کی فلم انڈسٹری کو ضرورت ہے۔‘

کِٹّی کُو کا کہنا ہے’ہندوستان کے سٹوڈنٹس سیکھنا چاہتے ہیں کہ ہالی وڈ میں فلمیں کس طرح سے بنتی ہیں۔‘

نیویارک اکیڈمی دلی کے نواحی علاقے نوئیڈہ میں اپنا فلم سکول کھولے گی۔

Image caption اوم پوری کا کہنا ہے کہ نیویارک اکیڈمی کے بھارت آنے سے بہت فائدہ ہوگا

فلم اینڈ ٹیلی ویژن انسٹیٹیوٹ یعنی ایف ٹی آئی آئی کے ڈائریکٹر ڈی جے نارائن کہتے ہیں کہ زیادہ مقابلے فائدہ مند ہیں۔ اس سے سیکھنے والوں کا بہت فائدہ ہوگا۔

ڈی جے نارائن مزید کہتے ہیں ’ہم مقابلے سے نہیں ڈرتے ہیں۔ ہم اپنا بہترین کام جاری رکھے گے جو ہم گزشتہ پچاس برس سے کر رہے ہیں۔ ہندوستان ایک آزاد ملک ہے جہاں جو چاہے اس طرح کی اکیڈمی شروع کر سکتا ہے۔‘

ایف ٹی آئی آئی پونے شہر میں واقع ہے جو کہ ممبئی سے بہت قریب ہے۔ ایف ٹی آئی ائی ہندوستان کا فلم میکنگ کورس کرانے والا سب سے نامور ادارہ ہے اور اس کا کہنا ہے کہ وہ بھی اپنے آپ کو ایک عالمی ادارے کے طور پر پیش کرنا چاہتا ہے کیونکہ یہاں دنیا بھر سے طلباء فلم بنانے کا ہنر سیکھنے آتے ہیں۔

حالانکہ ان کا کہنا ہے کہ نیویارک فلم اکیڈمی اپنے ساتھ ہالی وڈ کے بڑے نام بھی لے کر آئے گی جس سے طلباء کا کافی فائدہ ہوگا۔

نیویارک فلم اکیڈمی ہالی وڈ کے فلم ستارے اور فلمی دنیا سے منسلک مختلف لوگوں کو لیکچرز کے لیے دعوت دیتی ہے اور اس کا کہنا ہے کہ ہندوستان میں بھی وہ ایسا ہی کرے گی۔ یہاں وہ ہندوستانی فلم ماہرین اور اداکاروں کو لیکچرز کی دعوت دے گی لیکن ان کو کوئی تنخواہ نہیں ملے گی۔

کِٹّی کُو کا کہنا ہے ’ہم اس فلسفہ میں یقین کرتے ہیں کہ لوگ اپنے تجربات طلباء کے ساتھ تبادلہ کریں اور انہیں کچھ سکھا کر جائیں۔ ہالی وڈ میں یہ روايت رہی ہے کہ فلم سٹار اپنے تجربات کے بارے میں بات کرنے میں خوشی کا احساس کرتے ہیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ اکیڈمی کسی بھارتی کو کسی عہدے پر نہیں فائذ کرے گا اور اس کا سارا سٹاف امریکہ سے بلایا جائے گا۔

اسی بارے میں