ملکہ وکٹوریہ کی پینٹنگ کی نیلامی

ملکہ وکٹوریہ کی پینٹنگ تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption توقع کی جا رہی ہے کہ یہ پینٹنگ کم از کم تیس ہزار پاؤنڈ میں فروخت ہو گی

ایک آئل پینٹنگ جس میں ملکہ وکٹوریہ اور ان کے ملازم جان براؤن کو دکھایا گیا ہے یکم نومبر کو نیلام کی جا رہی ہے۔

اس پینٹنگ کی نیلامی لیون اینڈ ٹرن بُل نامی کمپنی کرے گی اور توقع کی جا رہی ہے کہ یہ کم از کم تیس ہزار پاؤنڈ میں فروخت ہو گی۔

یہ پینٹنگ ملکہ کے پسندیدہ مصور چارلس برٹن باربر نے بنائی تھی اور اس میں انہیں ایک گھوڑے پر سوار دکھایا گیا ہے اور ان کے ملازم جان براؤن نے گھوڑے کی لگام تھام رکھی ہے۔

یہ پینٹنگ ملکہ وکٹوریہ نے جان براؤن کو ان کی سالگرہ پر اٹھارہ سو چھہتر میں دی تھی۔

یہ پنٹنگ قدیم بیٹرسی ہاؤس کی ان پانچ سو نایاب اشیا میں سے ایک ہے۔ لندن کے علاقے بیٹر سی میں واقع اس محل کو سترہویں صدی میں تعمیر کیا گیا تھا اور پھر اسے انیس سو ستر میں شاہی خاندان نے دوبارہ آراستہ کیا۔

اس محل میں امریکی صدر رونالڈ ریگن اور اداکارہ ایلزبتھ ٹیلر سمیت کئی نامور شخصیات شاہی خاندان کی مہمان رہ چکی ہیں۔

باربر کی اس پینٹنگ کے علاوہ اس محل نما گھر کی دیگر نایاب اشیا میں خطوط، فرنیچر اور متعدد فن پارے شامل ہیں جن کی مجوعی کی مالیت کا اندازہ پندرہ سے بیس لاکھ پاؤنڈ لگایا جاتا ہے۔

جب مصور برٹن باربر کا انتقال ہوا تو ملکہ نے ان کے مدفن کے لیے بھیجے جانے والے پھولوں کے ساتھ جاری کیے جانے والے پیغام میں کہا کہ ’مداحی کے اعتراف کے طور پر وکٹوریہ آر آئی کی جانب سے‘۔

اس پینٹنگ کو گزشتہ ہفتے کے اختتام سے بیٹر سی ہاؤس میں عام نمائش کے لیے کھول دیا گیا ہے۔ یہ نمائش 27 اکتوبر تک جاری رہے گی جس کے بعد 28 اکتوبر سے اس کی نمائش نیلام کرنے والی کمپنی لیون اینڈ ٹرن بُل میں شروع ہو گی اور نیلام تک جاری رہے گی۔

اسی بارے میں