ٹیگور اور ان کی’معشوقہ‘ پر فلم

فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ elvis

ارجنٹائن کے ہدایت کار پابلو سیزر بھارتی شاعر رابندرناتھ ٹیگور پر ایک ایسی فلم بنا رہے ہیں جس کا موضوع اس عظیم شاعر کی نجی زندگی کا ایک انتہائی حساس پہلو ہے۔

پابلو سیزر کا نیا فلمی منصوبہ ارجنٹنائن کی ہی ادیبہ وکٹوریہ اوکیمپو کے ساتھ ٹیگور کے ’قریبی مگر غیر جسمانی تعلق‘ پر مبنی ہے۔

وکٹوریہ ارجنٹائن کے ایک ادبی جریدے کی ایڈیٹر تھیں اور ساتھ ہی ثقافتی حقوق کے لیے بھی سرگرم تھیں۔

فلم کی کہانی سنہ انیس سو چوبیس میں ٹیگور کے ارجنٹائن میں عارضی قیام کے گردگھومتی ہے جس کے دوران وکٹوریہ اوکیمپو کے ساتھ ان کا گہرا جذباتی تعلق پیدا ہوگیا تھا۔

ڈائریکٹر سیزر کہتے ہیں کہ فلم کے کچھ حصے میں آج کے دور کی جبکہ کچھ میں سنہ انیس سو بیس کی دہائی کے زمانے کی منظر کشی کی جائے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا ’میں نے اس فلم پر کام سنہ دو ہزار آٹھ میں ارجنٹائن میں بھارتی سفیر کے کہنے کے بعد شروع کیا تھا۔ لیکن ریسرچ اور فنڈنگ کی وجہ سے میں یہ منصوبہ ٹیگور کی ایک سو پچاسویں برسی کے موقع پر مکمل نہیں کر سکا‘۔

وکٹوریہ اوکیمپو ایک چھوٹی عمر سے ہی ٹیگور سے متاثر تھیں اور بھارتی شاعر کا ان کی شخصیت پرگہرا اثر تھا۔

ٹیگور اور وکٹوریہ کے آپس میں رشتے کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ انہوں نے سنہ انیس سو پچیس میں شائع ہونے والی اپنی نظموں کی کتاب کا انتساب وکٹوریہ کے نام کیا تھا۔

اسی بارے میں