میں سیلزمین نہیں ہوں: امیتابھ بچن

Image caption میں اس طرح کی مارکیٹنگ کرنے میں بالکل بھی ہنرمند نہیں ہوں:امیتابھ

تیل سے لے کر پین تک، کار سے لے کر سیمنٹ تک درجنوں مصنوعات کی تشہیر کرنے والے بھارتی فلمی دنیا کے سپر سٹار امیتابھ بچن کا کہنا ہے کہ وہ سیلز مین نہیں ہیں۔

امیتابھ بچن کے مطابق وہ آج کے دور میں فلموں کے زبردست تشہیر اور فروخت پر کروڑوں روپے خرچ کرنے کے چلن سے بے حد حیران ہیں۔

انہوں نے اپنے بلاگ پر لکھا ’لوگوں کی توجہ اپنی طرف کھینچنے کے لیے استعمال کی جا رہی مختلف تراکیب سے میں حیران ہوں۔ کروڑوں روپے یہاں تک کہ کئی بار فلم کے بجٹ کے برابر رقم صرف شائقین کی موجودگی کو یقینی بنانے کے لیے خرچ کر دیے جاتے ہیں‘۔

امیتابھ بچن نے ایسے ہی ایک واقعہ کا ذکر کرتے ہوئے لکھا کہ جب وہ ريالٹي شو بگ باس کی میزبان تھے تو اس کی ایک قسط میں اکشے کمار اپنی کسی فلم کی تشہیر کے لیے آئے۔

اکشے کمار اس دوران بے حد جلدی میں تھے اور جب امیتابھ نے پوچھا کہ اتنی جلدی کیا ہے تو اکشے نے بتایا کہ شو کے فورا بعد انہیں کسی دوسری جگہ فلم کی تشہیر کرنے کے لیے جانا ہے۔ اکشے نے امیتابھ سے معافی مانگنے کے لہجے میں کہا، ’ کیا کریں سر جی، کرنا پڑتا ہے‘۔

امیتابھ نے اپنے بلاگ میں یہ بھی لکھا کہ ’میں اس طرح کی مارکیٹنگ کرنے میں بالکل بھی ہنرمند نہیں ہوں لیکن مارکیٹ کے دباؤ میں مجھے ایسا کرنا پڑتا ہے‘۔

. امیتابھ نے یہ بھی کہا کہ ایک بار انہوں نے جنوبی ہندوستانی سنیما کے سپر سٹار رجنی كانت سے پوچھا کہ موجودہ دور کی اس طوفانی سیلز کے چلن پر ان کی کیا ردعمل ہے. تو رجني كانت نے کہا، ’امت جی، میں اداکار ہوں۔ میرا کام ہے اداکاری کرنا۔ یہ سب تشہیر کرنے کی قطعی ضرورت نہیں ہے، اگر فلم اچھی ہوگی تو لوگ اسے دیکھیں گے اور اگر فلم میں دم نہیں ہوگا، تو چاہے کچھ کر لو ، اسے دیکھنے شائقین نہیں آئیں گے‘

بقول امیتابھ بس ان الفاظ کے ساتھ ہی بحث کا اختتام ہوگیا۔

اسی بارے میں