معروف امریکی مصنف گور وڈال چل بسے

گور وڈال تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption امریکی مصنف گور وڈال نے پچیس ناول تحریر کیے

امریکہ کے معروف ادیب اور سیاسی مبصر گور وڈال چھیاسی برس کی عمر میں لاس اینجلس میں انتقال کر گئے ہیں۔

ان کے اہل خانہ نے ان کے انتقال کی خبر کی تصدیق کی ہے اور باور کیا جاتا ہے کہ انہیں نمونیہ کی شکایت تھی۔

ان کے بھتیجے بر سٹیئرس نے امریکی میڈیا کو بتایا کہ ان کے چچا کی طبیعت ’ کافی دن سے خراب تھی‘۔

گور وڈال نے بہت ہی مقبول ’بر اینڈ مائیرا بریکنرج‘ سمیت پچیس ناول تخلیق کیے۔ انہوں نے مختلف مضوعات پر دوسو سے زائد مضامین اور بہت سے ڈرامے بھی تحریر کیے۔

وڈال جانے مانے سیاسی مبصر بھی تھے۔ انہوں نے دوبار کانگریس کی رکنیت کے لیے انتخاب میں حصہ لیا تھا لیکن انہیں اس میں کامیابی نہیں ملی۔

ان کا معروف سیاسی کینڈی خاندان سے بھی گہرا ربط تھا اور وہ جیکی کینڈی کے معتمد تھے جو ان کی سوتیلی بہن تھیں۔

ان کا جنم انیس سو پچیس میں امریکہ کے معروف سیاسی خاندان ہوا تھا۔ انہوں نے اپنی پہلی کتاب انیس برس کی عمر میں تصنیف کی تھی اور بعد میں وہ امریکہ منفرد ادیب بن کر ابھرے لیکن ان کا کریئر نشیب و فراز سے پر رہا۔

ان کی دوسری کتاب '' دی سٹی اینڈ پلر'' ہم جنسی کے موضوع پر تھی اور اس کے حوالے سے اس وقت بہت تنازع ہوا۔ کتب فروشوں نے اسے اپنی دکان پر رکھنا بھی مناسب نہیں سمجھا اور ان کا پوری طرح بائیکاٹ کیا گيا۔

تصویر کے کاپی رائٹ bb
Image caption انہیں اپنی تحریروں کے لیےایک فرضی نام بھی استعمال کرنا پڑا۔

سنہ پچاس کے عشرے میں بالآخر انہیں اپنی تحریروں کے لیے انہیں ایک فرضی نام استعمال کرنا پڑا۔

لیکن بعد میں پھر انہوں نے اپنے نام سے دوبارہ لکھنا شروع کیا اور دوسری فلموں سمیت ’بین حر‘ نامی مشہور فلم کے سکرین پہلے پر کام کیا۔

لیکن انیس سو اسّی کے آس پاس ابراہم لنکن جیسی امریکی شخصیات پر اپنے تاریخی ناول کی وجہ سے ایک بار پھر وہ سب افق پر ابھرے۔

لیکن بہت بار وہ اپنے دور کے ادباء یا حکمرانوں سے مطمئن بھی نہیں تھے۔ اپنے ہم عصروں سے ان کی کافی ٹھنی بھی رہی۔

خاص طور پر قدامت پسند خیال کے ولیم ایف بکلر جونیئر اور ادیب نورمن میلئر سے ان کی نہیں بنتی تھی۔

اسی بارے میں