عامر خان ٹائم میگزین کے سرورق پر

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 31 اگست 2012 ,‭ 09:06 GMT 14:06 PST
عامر خان

عامر خان کا ٹی وی شو ستیہ میو جیتے کافی مقبول ہوا تھا

اپنے ٹی وی شو ’ستیہ میو جیتے‘ کی مقبولیت کے بعد اداکار عامر خان کو ٹائم ميگزین نے اپنے سرورق پر جگہ دی ہے اور لکھا ہے کہ ایک اداکار سماجی برائیوں کے خلاف آواز اٹھاکر ملک کو بدل سکتا ہے۔

ٹائم میگزین نے اپنے سرورق پر عامر خان کی تصویر چھاپی ہے اور اس کا عنوان دیا ہے ’خانز کویسٹ‘ یعنی خان کی جدوجہد۔

ساتھ ہی میگزین نے لکھا ہے کہ ’عامر خان ایسے اداکار ہیں جو بالی وڈ کی روایت کو توڑنے کی کوشش کررہے ہیں۔ بھارت میں سماجی برائیوں کے خلاف آواز اٹھا کر کیا ایک اداکار ملک کو بدل سکتا ہے؟‘

ٹائم ميگزین نے عامر خان پر سرورق سٹوری ان کے شو کی مقبولیت اور شو میں حساس سماجی موضوعات پر ہونے والی بحث کے تناظر میں کی ہے۔

عامر خان پہلی بھارتی شخصیت نہیں ہیں جنہیں ٹائم میگزین نے اپنے سر ورق پر جگہ دی ہے اس سے پہلے کرکٹ کھلاڑی سچن تندولکر، سانیہ مرزا، اندرا گاندھی، گجرات کے وزیر اعظم نریندر مودی اور موجودہ وزیر اعظم منموہن سنگھ کو بھی ٹائم میگزین کے سرورق پر جگہ ملی۔

تقریبا گزشتہ دو ماہ قبل ٹائم ميگزین نے بھارتی وزیر اعظم منموہن سنگھ کی تصویر کو اپنے کورر پر شائع کیا تھا اور انہیں ’انڈراچیور‘ یعنی امیدوں پر پورا نہ اترنے والا، کہا تھا جس کے بعد ایک سرکردہ بھارتی میگزین نے اپنے سرورق پر امریکی صدر براک اوباما کی تصویر شائع کی اور انہیں بھی ’انڈراچیور‘ قرار دیا تھا۔

ٹائم میگزین نے جن فلمی شخصیات کی تصاویر شائع کی ہیں ان میں ایشوریہ رائے بچن، پروین بابی اور اب عامر خان کے نام شامل ہوگئے ہیں۔

عامر خان نے اس برس کی شروعات میں ستیہ میو جیتے نامی ٹی وی شو کی میزبانی کی تھی جس میں جہیز، رحم مادر میں بچیوں کو مارنے، اور نقلی دواؤں جیسے موضوعات پر بات کی تھی۔

عامر خان کا شو اس وقت تنازعہ کا شکار ہوا جب ستائیس مئی کو نشر ہونے والے پروگرام میں میڈیکل کی دنیا میں ہونے والے غیر قانونی کاموں اور سڑکوں پر کام کرنے والے ڈاکٹروں کے ہاتھوں غلط علاج کے واقعات پیش کیے گئے تھے۔

اس شو کے نشر ہونے کے بعد انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن نے عامر خان سے فوراً معافی کا مطالبہ کرتے ہوئے ان کے خلاف قانونی کارروائی کرنے کی دھمکی دی تھی۔

ڈاکٹروں کی انجمن کا کہنا تھا کہ عامر خان نے اپنے شو میں ڈاکٹروں کے پیشے کو بدنام کیا ہے۔

عامر خان کے اس شو کے بارے میں سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر بھی کافی بحث و مباحثہ ہوئے تھے۔ ایک طرف جہاں بیشتر افراد عامر خان کے اس قدم سے خوش ہیں وہیں بعض کا کہنا ہے کہ ان موضوعات پر بات کرنے کے پيچھے عامر خان کا مقصد صرف شہرت پانا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔