ایڈیل کے البم ’21‘ کا ایک اور ریکارڈ

آخری وقت اشاعت:  اتوار 30 دسمبر 2012 ,‭ 16:29 GMT 21:29 PST

چوبیس سالہ گلوکارہ ایڈل نے اس البم پر چھ گریمی اور دو بریٹ ایوارڈ جیتے تھے۔

برطانوی گلوکارہ ایڈیل کی البم ’21‘ برطانیہ میں فروخت ہونے والی تاریخ کی چوتھی مقبول ترین البم بن گئی ہے جو کہ اس سے پہلے ’اوئیسز‘ کی البم ’مورنگ گلوری‘ تھی۔

’آفِیشل چارٹس کمپنی‘ سے ملنی والی معلومات سے پتا چلتا ہے کہ پانچ لاکھ مزید کاپیاں فروخت کرنے پر ایڈیل تیسرے مقام پر پہنچ جائیں گی جہاں ابھی ’ایبا‘ ہے۔

’رولنگ ان دا ڈیپ‘ اور ’ریومر ہیز اِٹ‘ جیسے مقبول گانوں والی البم ’ٹوئنٹی ون‘کی اب تک پنتالیس لاکھ باسٹھ ہزار کاپیاں فروخت کی جا چکی ہیں۔

اس سال کے آغاز میں البم نے برطانیہ میں فروخت کا مائیکل جیکسن کے گانے ’تھرلر‘ کا ریکارڈ بھی توڑدیا تھا۔

گذشتہ کرسمس کے موقع پر اس البم نے ایمی وائن ہاؤس کے البم ’بیک ٹو بلیک‘ سے زیادہ فروخت ہو کر اکیسویں صدی کی اب تک کی مقبول ترین البم کا اعزاز حاصل کیا۔

جنوری دو ہزار گیارہ میں جاری ہونے والی یہ البم ’آفشل البم چارٹس‘ کی درجہ بندی میں پہلے نمبر پر تئیس ہفتوں تک رہی اور دس بہترین البمز کی درجہ بندی میں چھہتر ہفتوں تک رہی۔

اس سال ’21‘ البم کی سات لاکھ چوراسی ہزار کاپیاں فروخت ہوچکی ہیں اور دو ہزار بارہ میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والی البمز میں یہ دوسرے نمبر پر ہے۔ پہلے نمبر پر ایملی سینڈرز کی ’آ ور ورژن آف ایونٹس‘ ہے۔

چوبیس سالہ گلوکارہ ایڈل نے اس البم پر چھ گریمی ایوارڈ اور دو بریٹ ایوارڈ جیتے تھے۔

اکتوبر میں ان کے پہلے بچے کی پیدائش بھی ہوئی۔

دنیا بھر میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والی البم ابھی بھی مائیکل جیکسن کی تھرلر ہی ہے۔ چند اندازوں کے مطابق اب تک تھرلر کی سات کروڑ کاپیاں فروخت ہو چکی ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔