رومانیہ کی فلم کو گولڈن بیئر ایوارڈ

آخری وقت اشاعت:  اتوار 17 فروری 2013 ,‭ 06:35 GMT 11:35 PST
کالن پیٹر نٹزر

کالن پیٹر نٹزر کی فلم چائلڈز پوز کو بہترین فلم کے اعزاز سے نوازا گيا

ترسٹھویں برلن فلم فسٹیول میں رومانیہ کی فلم ’چائلڈز پوز‘ کو فلموں کے انتہائی اہم اعزاز گولڈن بیئر سے نوازا گیا ہے۔

یہ فلم کالن پیٹر نٹزر کی ہدایتکاری میں بنی ہے اور اس میں ایک ایسی امیر ماں کی کہانی بیان کی گئی ہے جو اپنے بیٹے کو جیل جانے سے بچانے کے لیے اپنے تمام اثرورسوخ کو بروئے کار لاتی ہے۔

اس ایوارڈ کے لیے انیس فلمیں قطار میں تھیں لیکن اس فلم کو اعزاز سے نوازا گیا۔ فلم کے ہدایت کار نٹزر نے کہا کہ وہ اس جیت سے ’ذرا بے زبان‘ ہو گئے ہیں۔

بوسنیا ہرزیگوینا کے بے روزگار روما کو بہترین اداکار کے اعزاز سے نوازا گیا۔

اس فلم فیسٹیول کے دوران سلور بیئر یعنی دوسرا اہم ترین ایوارڈ ’این ایپیسوڈ ان دا لائف آف این آ‏ئرن پکر‘ یعنی لوہے کے ٹکڑے چننے والے کی زندگی کودیا گیا ہے۔

یہ کم بجٹ والی فلم ہے اور اس میں نازف میوجک نے اپنے خاندان کی طبی علاج حاصل کرنے کی حقیقی جددوجہد کو پیش کیا گیا ہے۔

کالن پیٹر نٹزر کی فلم جدید رومانیہ میں بدعنوانی اور جرم کی داستان ہے جس میں ایک امیر اور تمام امور کو کنٹرول کرنے والی ماں کو دکھایا گیا ہے۔

اس ماں کا کردار لومینیتا غیرغیو نے پیش کیا ہے وہ شاہدین اور گواہوں کو جھوٹ بولنے کے لیے رشوت دیتی ہیں تاکہ وہ اپنے بیٹے کو جیل جانے سے بچا سکیں۔ ایک حادثے میں ان کے بیٹے کے ہاتھوں ایک بچہ ہلاک ہو جاتا ہے۔

امریکی فلم ساز ڈیوڈ گارڈن کو مزاحیہ قسم کی فلم ’پرنس ایوالانش‘ کے لیے بہترین ہدایتکار کے اعزاز سے نوازا گیا۔

بہترین اداکارہ کا اعزاز چیلی کی پالینا گریشیا کو فلم ’گلوریا‘ میں سینٹیاگو کی ایک طلاق یافتہ خاتون کا کردار ادا کرنے کے لیے دیا گیا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔