نائجیریائی ادیب چنوا اچیبے فوت ہو گئے

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 23 مارچ 2013 ,‭ 21:00 GMT 02:00 PST

چنوا اچیبے کا ناول تھنگز فال اپارٹ کی ایک کروڑ سے زائد جلدیں فروخت ہو چکی ہیں

شہرہ آفاق نائجیریائی ادیب چنوا اچیبے کا 82 برس کی عمر میں مختصر بیماری کے بعد انتقال ہو گیا ہے۔

ان کے خاندان نے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ان کی ’دانش اور ہمت‘ ان سب لوگوں کے لیے تحریک کا باعث ہے جو انھیں جانتے تھے۔‘

اچیبے کا 1958 میں لکھا گیا پہلا ناول ’تھنگز فال اپارٹ‘ بے حد مشہور ہوا تھا۔ اس ناول افریقہ میں نوآبادیت کے اثرات کا جائزہ لیا گیا تھا۔ اب تک اس ناول کی ایک کروڑ سے زائد جلدیں فروخت ہو چکی ہیں۔

وہ 1990 کے بعد سے امریکہ میں مقیم تھے۔

اچیبے نے 20 سے زائد کتابیں لکھی ہیں، جن میں سے کچھ کتابوں میں نائجیریا میں قیادت اور سیاست دانوں کی ناکامیوں پر شدید تنقید کی گئی ہے۔

جنوبی افریقی نوبیل انعام یافتہ ادیبہ نڈین گورڈیمر نے 2007 میں انھیں ’بابائے جدید افریقی ادب‘ کہا تھا۔

تھنگز فال اپارٹ کا 50 سے زائد زبانوں میں ترجمہ ہو چکا ہے۔ اس میں نائجیریا کے روایتی اِگبُو قبیلے کا داستان بیان کی گئی ہے جس کا مغربی تہذیب اور اقدار کے ساتھ تصادم ہوتا ہے۔

اچیبے کی آبائی ریاست انامبرا کے گورنر کے ترجمان نے بی بی سی کو بتایا کہ ’ریاست، نائجیریا اور افریقہ اپنے نامور بیٹے‘ کی موت کے غم میں ماتم کناں ہیں۔

نائجیریا کے صدر گڈلک جوناتھن نے کہا کہ اچیبے کے چاہنے والوں نے ان کی تخلیقات سے ’انسانی ہستی کے بارے میں ناقابلِ فراموش سبق‘ حاصل کیے ہیں۔

"اچیبے ایک ایسے ادیب تھے جن کی معیت میں جیل کی دیواریں گر جاتی تھیں۔"

نیلسن منڈیلا

اچیبے نے گذشتہ برس بیافران جنگ کے بارے میں ذاتی یادداشتوں پر مبنی کتاب شائع کی تھی۔ یہ جنگ 1967 میں اگبو خطے کی نائجیریا سے علیٰحدگی کی کوشش کے سلسلے میں شروع ہوئی تھی۔

اچیبے نائجیریا سے امریکہ منتقل ہو گئے تھے جہاں وہ پڑھاتے تھے۔ 1990 میں کار کے ایک حادثے میں ان کے بدن کا نچلا دھڑ مفلوج ہو گیا تھا۔

جنوبی افریقہ کے سابق صدر نیلسن منڈیلا نے اچیبے کے لواحقین کو تعزیتی پیغام بھیجا ہے، جس میں کہا گیا ہے، ’اچیبے ایک ایسے ادیب تھے جن کی معیت میں جیل کی دیواریں گر جاتی تھیں۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔