پاکستانی فلموں میں بڑھتا ہوا نیا رحجان

Image caption عید الفطر پر صرف تین پاکستانی فلمیں ہی سنیما گھروں کی زینت بنیں

پاکستان میں اس برس عید کے موقع پر کچھ ایسی فلمیں ریلیز ہو رہی ہیں جو اگر ناظرین کی توجہ حاصل کر پائیں تو شاید کئی برس سے بحران کا شکار لولی وڈ فلم انڈسڑی میں جان ڈال دیں۔

فلمی نقادوں کو توقع ہے کہ ہالی وڈ اور بالی وڈ فلموں سے مسابقت کے باوجود اس بار پاکستانی فلمیں باکس آفس پر اچھا بزنس کریں گی۔

پاکستان میں فلمسازوں کے لیے اپنی فلمیں ریلیز کرنے کا سب سے زیادہ اہم موقع تو عید کا ہوتا ہے اور سب کی کوشش ہوتی ہے کہ عید کی چھٹیوں میں فلم ریلیز کریں تاہم اس بار عید الفطر پر صرف تین پاکستانی فلمیں ہی سنیما گھروں کی زینت بنیں۔

ان فلمیں میں سے ایک شہزاد رفیق کی فلم ’عشق خدا‘ ہے۔ اس فلم میں مرکزی کردار شان نے ادا کیا ہے جبکہ میرا اور احسن خان بھی اس کی کاسٹ میں شامل ہیں۔

ہدایتکار شہزاد رفیق کہتے ہیں ’عشق خدا کی خاص بات یہ ہے کہ یہ فلم صوفی ازم پر بنائی گئی ہے۔ اس سے پہلے پاکستانی فلموں میں اس موضوع کو نہیں چھیڑا گیا۔ یہ واحد پنجابی فلم ہے جس میں کوئی ہتھیار نہیں اور نہ ہی قتل و غارت دکھائی گئی ہے۔ اس کا مواد ایسا ہے جو تفریح کے ساتھ دیکھنے والوں کو ایک ایسی دنیا میں لے جاتا ہے جو امن کی دنیا ہے‘۔

’عشق خدا‘ کی عکسبندی پاکستان کے چاروں صوبوں اور شمالی علاقہ جات میں کی گئی ہے۔ شہزاد رفیق کا دعویٰ ہے کہ انھوں نے فلم کی شوٹنگ کے دوران کئی نئی لوکیشنز دریافت کی ہیں۔

پاکستان میں عید پر ریلیز ہونے والی فلم ’جوش‘ کی ڈائریکٹر اور پروڈیوسر ارم پروین بلال اپنی فلم کے بارے میں کچھ یوں بتاتی ہیں۔

’اتحاد میں آزادی ہے اور ایک انسان انقلاب لا سکتا ہے۔ اس فلم میں طبقاتی تقسیم پر نوجوانوں کی بیداری کی تحریک اور جاگیردارنہ نظام پر فوکس کیاگیا ہے۔ یہ ہماری ایک سچی اور مخلص کوشش ہے‘۔

عید پر ریلیز ہونے والی فلموں کی تعداد اگرچہ زیادہ نہیں پھر بھی فلمسازوں نے اپنی فلموں کی پرموشن پر خوب توجہ دی ہے۔ یہ پاکستانی فلم انڈسٹری میں ایک نیا رجحان ہے۔

’جوش‘ کی ٹیم نے تعلیمی اداروں میں جا کر اپنی فلم متعارف کروائی اور نوجوانوں کو قائل کیا کہ وہ یہ فلم ضرور دیکھیں۔

اداکارہ نائلہ جعفری ٹی وی کے متعدد ڈراموں میں کام کر چکی ہیں لیکن اب وہ پہلی بار فلم ’جوش‘ میں جلوہ گر ہوئیں۔

نائلہ کا کہنا ہے ’ہمارے ہاں جیسی فلمیں بنتی ہیں ہم جیسے لوگ تو سوچ بھی نہیں سکتے تھے کہ ان میں کام کریں۔ لیکن اب نیا رجحان فروغ پا رہا ہے۔ ’بول‘، ’خدا کے لیے‘ اور اب ’جوش‘ جیسی فلمیں بن رہی ہیں جو مجھے لگتا ہے کہ معاشرے پر اچھا اثر ڈالیں گی‘۔

Image caption پاکستان میں کچھ فلمیں ابھی بھی روایتی طرز پر ہی بنائی جا رہی ہیں جن میں سے ایک ’ڈرٹی گرل‘ بھی ہے

پاکستان میں کچھ فلمیں ابھی بھی روایتی طرز پر ہی بنائی جا رہی ہیں جن میں سے ایک ’ڈرٹی گرل‘ بھی ہے۔ یہ فلم بھی عید پر سنیماگھروں کی زینت بنی۔

فلم کے ڈائریکٹر اور پروڈیوسر قیصر ثنااللہ کا کہنا ہے ’یہ ایک تفریحی فلم ہے اور عید پر لوگ تفریحی فلمیں ہی دیکھنا چاہتے ہیں‘۔

عید پر شائیقین کو فلم ’میں ہوں شاہد آفریدی’ کا بے چینی سے انتظار تھا تاہم تکنیکی مشکلات کے باعث عید سے چند روز پہلے اس کی ریلیز کو موخر کرنے کا اعلان کیا گیا۔

اس فلم کی کہانی کرکٹ کے گرد گھومتی ہے اور نہ صرف فلم نہیں بلکہ کرکٹ کے متوالے بھی ’میں ہوں شاہد آفریدی’ میں خاصی دلچسپی لے رہے ہیں۔

فلم ایگزیبیٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین زوریز لاشاری کے مطابق زیرتکمیل اور ریلیز ہونے والی فلموں میں سے کئی ڈیجٹل ٹیکنالوجی پر بنائی جارہی ہیں جو ایک خوش آئند پہلو ہے۔

’جو نئے سنیما بنائے جا رہے ہیں وہ ہیں ہی ڈیجیٹل۔ انھوں نے تھرٹی فائیو ایم ایم رکھا ہی نہیں۔ اس سے فلم کا معیار بہت بہتر ہوجائے گا۔ اور شائقین کی فلم دیکھنے کی حس بہتر ہوگی‘۔

فلم ’زندہ بھاگ‘ کے بارے میں بھی یہ اطلاعات تھیں کہ یہ فلم بھی عید پر ریلیز ہوگی تاہم یہ فلم ابھی مکمل نہیں ہوسکی۔

اس فلم میں مرکزی کردار بھارتی اداکار نصیر الدین شاہ ادا کر رہے ہیں۔

ایک لمبے عرصے سے لاہور کے فلم سٹوڈیوز کی رونقیں ماند پڑ چکی ہیں خاص طور پر بھارتی فلموں کی پاکستانی سنیماوں میں نمائش نے رہی سہی کسر پوری کردی۔

پاکستان میں اس برس بھی عید پر بھارتی فلم ’چنائی ایکسپریس‘ ریلیز ہوئی لیکن اس بار فلم بین خصوصاً نوجوان پاکستانی فلموں کو بھی دیکھنے کے لیے پر عزم دکھائی دیے۔

منیب وائیں ایک کالج سٹوڈنٹ ہیں ان کا کہنا ہے ’فلم اچھی ہونی چاہیے اس سے فرق نہیں پڑتا کہ یہ بھارتی ہے یا پاکستانی۔ اس بار کئی اچھی پاکستانی فلمیں بن رہیں ہیں اور لوگوں کو انھیں چانس دینا چاہیے‘۔

نقادوں کا خیال ہے کہ اگر یہ فلمیں عوام کو متوجہ کرنے میں کامیاب ہوگئیں تو پاکستانی سنیما صرف ملکی ہی نہیں بلکہ بین الاقوامی سطح پر بھی ایک بہتر شناخت بنا سکے گا۔

اسی بارے میں