امیتابھ کی زندگی کے کچھ یادگار لمحے

Image caption فلم سات ہندوستانی میں امیتابھ

بالی وڈ کے معروف اداکار امیتابھ بچن 11 اکتوبر کو 71 سال کے ہو گئے۔ سال 1969 میں انہوں نے خواجہ احمد عباس کی فلم ’سات ہندوستانی‘ سے اپنے فلمی کیرئر کا آغاز کیا۔ اس تصویر میں دبلے پتلے امیتابھ بالکل دائیں جانب ہیں۔

اگر چہ سات ہندوستانی کو باکس آفس کامیابی نہیں ملی لیکن امیتابھ بچن کو ان کی بہترین اداکاری کے لیے پہلی ہی فلم میں قومی ایوارڈ سے نوازا گيا۔

Image caption ڈان کے ہدایت کار چندرا باروٹ کے ساتھ

سنہ 1978 میں ریلیز ہونے والی امیتابھ کی معروف فلم ’ڈان‘ تو بہت سے لوگوں نے دیکھی ہی ہوگی، لیکن یہ تصویر کم ہی لوگوں کی نظروں سے گزری ہو گی۔

فلم ڈان کی شوٹنگ کا ایک منظر۔ فلم کے نغمے ’ای ہے بمبئی نگريا تو دیکھ ببوا۔۔۔‘ کی شوٹنگ ممبئی کے تاریخی مقام گیٹ وے آف انڈیا پر ہو رہی تھی کہ امیتابھ کو دیکھنے کے لیے سینکڑوں لوگوں کی بھیڑ جمع ہو گئی۔

Image caption ای ہے بمبئی نگریا کی شوٹنگ گیٹ وے آف انڈیا پر ہوئی تھی

شوٹنگ کرنے میں خاصی دقت پیش آئی۔ اس تصویر میں ہدایت کار چندرا باروٹ بھی نظر آ رہے ہیں۔ چندرا امیتابھ کو ’ٹائیگر‘ کہہ کر بلاتے تھے۔

’ڈان‘ کی شوٹنگ کے دوران ہی فلم کے پروڈیوسر نریمن ایرانی کا انتقال ہو گیا تھا۔ چنانچہ چندرا باروٹ، امیتابھ بچن اور معروف اداکار پران نے مل کر فلم پوری کرنے میں نریمن ایرانی کی اہلیہ کا ہاتھ بٹایا۔ فلم میں پران کو امیتابھ بچن سے زیادہ معاوضہ ملا تھا۔

Image caption چندرا باروٹ کے ساتھ ایک سین پر غور کرتے ہوئے

سنہ 1975 میں ریلیز ہونے والی فلم ’شعلے‘ کو بھلا کون بھول سکتا ہے۔ اس فلم نے باکس آفس پر کامیابی کے نئے ریکارڈ قائم کیے۔ اس فلم کی شوٹنگ کے دوران ڈائریکٹر رمیش سپّي اور امیتابھ بچن کو ایک سین پر بحث کرتے ہوئے اس تصویر میں دیکھا جا سکتا ہے۔

Image caption فلم شعلے کے سیٹ پر ہدایت کار رمیش سپّی کے ساتھ

’شعلے‘ جب ریلیز ہوئی تو اسے پہلے ہفتے ناظرین نے تقریباً مسترد کردیا تھا۔ تب ڈائریکٹر رمیش سپّي نے امیتابھ بچن سے کہا کہ وہ كلائمیكس دوبارہ شوٹ کرنا چاہتے ہیں۔

فلم میں امیتابھ بچن کا کردار مرجاتا ہے اور سپّي اس کردار کو ري شوٹ کرکے اسے تبدیل کرنا چاہتے تھے۔ لیکن ریلیز کے دوسرے ہفتے میں اچانک ناظرین ’شعلے‘ دیکھنے ٹوٹ پڑے اور پھر جو ہوا وہ تاریخ کا حصہ ہے۔

Image caption فوٹوگرافر تانبے کے ساتھ امیتابھ

اس تصویر میں 70 کی دہائی کے نوجوان امیتابھ بچن نظر آ رہے ہیں۔ اس میں فوٹو گرافر دیپک تانبے ان کے ساتھ ہیں۔ امیتابھ بچن نے جب فلمی دنیا میں قدم رکھا وہ دور راجیش کھنہ کی مقبولیت کا دور تھا۔

امیتابھ کی کئی فلمیں مسلسل فلاپ ہوئیں اور ان کا کریئر تقریبا ختم ہونے کو تھا کہ سنہ 1973 میں بننے والی پرکاش مہرہ کی فلم ’زنجیر‘ نے سارا نقشہ ہی بدل کر رکھ دیا اور امیتابھ نے شہرت کی بلندیوں کی جانب جو سفر شروع کیا وہ آج تک جاری و ساری ہے۔

Image caption گلوکار سودیش بھونسلے کے ساتھ امیتابھ

گلوکار سودیش بھونسلے کے ساتھ امیتابھ بچن۔ یہ تصویر ہے 90 کی دہائی کے شروع کی۔ اسی دور میں بننے والی فلم ’ہم‘ کے نغمے ’چما چما دے دے‘ نے کامیابی کی نئی تاريخ رقم کی۔ امیتابھ کے لیے یہ گانا سودیش بھونسلے نے ہی گایا تھا۔

ان کی آواز امیتابھ بچن سے اتنی زیادہ مماثلت رکھتی ہے کہ ایک دفعہ سودیش نے فون پر امیتابھ کی بیوی جیا بچن سے بات کی تو وہ انہیں امیتابھ سمجھ بیٹھیں۔

Image caption اس میں اداکار دھرمیندر بھی نظر آ رہے ہیں

’اب تمہارے حوالے وطن ساتھيو‘کے پروموشن کے دوران لی گئی تصویر جس میں معروف اداکار دھرمیندر بھی نظر آ رہے ہیں۔

فلم 2004 میں ریلیز ہوئی تھی. یہ باکس آفس پر ناکام رہی تھی۔

Image caption اہل خانہ کے ساتھ

یہ تصویر ہے امیتابھ بچن کے ممبئی میں واقع گھر جلسہ کی۔ اس میں ان کی بیوی جیا بچن، بہو ایشوریہ رائے بچن اور بیٹے ابھیشیک بچن بھی نظر آ رہے ہیں۔ امیتابھ بچن عام طور پر اتوار کو اپنے گھر کے باہر اپنے مداحوں سے ملاقات کرتے ہیں۔