اوتار فلم کا سیکوئل نیوزی لینڈ میں

Image caption فلم اوتار سنہ 2009 میں ریلیز کی گئی تھی اور اسے تین آسکر انعامات سے نوازا گیا تھا

ہالی وڈ کے معروف ہدایت کار جیمز کیمرون اور نیوزی لینڈ حکومت نے اعلان کیا ہے کہ معروف فلم ’اوتار‘ کا سیکوئل نیوزی لینڈ میں بنایا جائے گا۔

اطلاعات کے مطابق اس منصوبے پر نیوزی لینڈ میں کم از کم 50 لاکھ نیوزی لینڈ ڈالر (تقریبا ساڑھے 41 لاکھ امریکی ڈالر) خرچ آئے گا اور سینکڑوں افراد کے لیے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔

واضح رہے کہ یہ اعلان اس پیشکش کے نتیجے میں کیا گیا ہے کہ نیوزی لینڈ حکومت فلم انڈسٹری پر لگائے جانے والے ٹیکس میں 25 فی صد کی چھوٹ فراہم کرے گی۔ پہلے یہ چھوٹ 15 فی صد ہوا کرتی تھی۔

فلم ’اوتار‘ کے پہلے حصے کی شوٹنگ بھی نیوزی لینڈ میں ہوئی تھی اور یہ سنہ 2009 میں ریلیز کی گئی تھی۔ اس فلم کو تین آسکر انعامات سے نوازا گیا تھا۔

اس فلم کے تھری ڈی ورژن نے فلم کی تاریخ میں اب تک کی سب سے زیادہ کمائی کی ہے۔

نیوزی لینڈ کے اقتصادی ترقی کے وزیر سٹیون جوائس نے اس اعلان کو ’نیوزی لینڈ کی فلم صنعت کے لیے خوش آئند خبر‘ قرار دیا ہے۔

انھوں نے کہا ’اوتار کا سیکوئل ملک میں روزگار کے سینکڑوں مواقع فراہم کرے گا اور سکرین کے شعبے میں براہ راست ہزاروں گھنٹے کام فراہم کرے گا۔‘

ٹیکس میں چھوٹ کے نئے قانون کے مطابق بنیادی چھوٹ کی سطح 20 فی صد رکھی گئی ہے جبکہ پانچ فی صد چھوٹ ان فلم سازوں کے لیے اضافی دیے جانے کا انتظام کیا گیا ہے جو نیوزی لینڈ کے لیے مخصوص شرائط پوری کرتے ہیں یا کسی طور نیوزی لینڈ کے مفاد میں ہیں۔

ایک دوسرے بیان میں حکومت نے کہا ہے کہ فلم انڈسٹری کے شعبے میں ٹیکس میں چھوٹ کا نظام گھریلو فلمی صنعت کو فروغ دینے اور ’بین الاقوامی سطح پر روز افزوں مقابلے کو تحریک دینے‘ کے لیے کیا گیا ہے۔

نیوزی لینڈ کے وزیر اعظم جان کی نے اوتار کے تعلق سے کیے جانے والے اعلان کو ان کے لیے ’کرسمس کے عظیم تحفے‘ سے تعبیر کیاجو عالمی سطح کی فلم بنانے میں لگے ہوئے ہیں۔

جیمز کیمرون نے کہا کہ ’سرکاری طور یہ کہا جانا کہ اوتار فلم نیوزی لینڈ میں بنائی جا رہی ہے یہ بات اپنے آپ میں باعث انبساط ہے۔‘

انھوں نے کہا کہ وہ اس فلم کو سنہ 2016 کے اواخر میں ریلیز کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

اسی بارے میں