’دھوم تھری‘ کی نیپال میں ریکارڈ کمائی

Image caption دھوم تھری کی کمائی تیس نیپالی ہٹ فلموں کے برابر

بالی وڈ کی فلم ’دھوم تھری‘ نے بھارت کے بعد اب نیپال میں باکس آفس پر اب تک کی سب سے کامیاب فلم بن کر تاریخ رقم کر دی ہے۔

عامر خان کی اداکاری والی اس فلم نے محض دو ہفتوں میں ہی چھ کروڑ نیپالي روپے کا کاروبار کیا ہے۔

ایک انداز ے کے مطابق عامر خان، قطرینہ کیف اور ابھیشیک بچن کی اداکاری سے مزین فلم ’دھوم تھری‘ کی کمائی 30 ہٹ نیپالي فلموں کے برابر ہے۔

نیپال کے تمام ملٹی پلیکسز میں ’دھوم تھری‘ دکھائی جا رہی ہے اور فی الحال سینما ہال میں اس فلم کو اور کوئی دوسری فلم سے مقابلہ بھی نہیں ہے۔

نیپال کے اخبار كانتي پور نے ’دھوم تھری‘ کی کمائی کو تاریخی قرار دیا ہے۔ اخبار نے موٹر سائیکل پر سوار عامر خان اور موٹر سائیکل سے لٹکے نوٹوں کے بنڈل کا ایک سکیچ شائع کیا ہے۔

اخبار کے مطابق فلم تقسیم کاروں کے ذرائع نے نیپال میں’دھوم تھری‘ کے چھ کروڑ روپے کے کاروبار کا دعویٰ کیا ہے۔

نیپال میں عام طور پر اگر کوئی فلم 20 لاکھ کا کاروبار کر لیتی ہے تو اسے ہٹ سمجھا جاتا ہے۔ اس پیمانے سے دھوم تھری کی کمائی 30 ہٹ نیپالي فلموں کے برابر مانی جا رہی ہے۔

نیپال کے دارالحکومت کھٹمنڈو میں گذشتہ سال کے تین ملٹی پلیکسز میں تقریباً 60 غیر ملکی فلمیں ریلیز ہوئیں تھیں اور ان کی مجموعی آمدنی تقریبًا 20 کروڑ روپے رہی۔

نیپال کے معروف فلم ہدایت کار تيرتھا تھاپا نے خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا ’عامر خان، ابھیشیک بچن اور قطرینہ جیسے فنکاروں کا نیپالي بازار میں بكنا فطری ہے۔ یہاں ہندوستانی سنیما کی کہانیاں نہیں بلکہ برانڈ فروخت ہوتے ہیں۔‘

Image caption نیپالی اخبار کے مطابق نیپال میں بھارتی فلموں کا تسلط ہے

تھاپا کہتے ہیں’فنکاروں کی اداکاری اور فلم کی کوالٹی اسے ناظرین کی نظر میں کامیاب بنا دیتی ہے۔‘

تھاپا کے مطابق نیپال کے بڑے سینما گھروں میں بھارتی فلموں کا ہی بول بالا ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ نیپالي فلمیں صرف دور دراز کے دیہی علاقوں اور گاؤں میں ہی چل پاتی ہیں۔

ان کے مطابق کھٹمنڈو، براٹ نگر، پوكھارا اور بھیرہوا جیسے بڑے شہروں میں بھارتی فلموں کا ہی تسلط ہے۔ بازار میں بھارتی فلموں کی حصہ داری تقریبا 80 فیصد ہے۔

تھاپا بتاتے ہیں کہ نیپال میں یوں تو ہر سال تقریباً 120 فلمیں بنتی ہیں تاہم فلموں کے معیار میں مسلسل گراوٹ ہے۔

نیپالي فلمیں ایک دہائی پہلے 50 سے 60 لاکھ تک کما لیتی تھیں لیکن اب وہ مشکل سے 15، 20 لاکھ ہی کما پاتی ہیں۔

اسی بارے میں