سلمان عدالت میں اور شرلن چوپڑہ کی ایف آئی آر

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کالے ہرن مقدمے کے علاوہ سلمان خان سنہ 2002 کے ’ہٹ اینڈ رن‘ کے مقدمے میں بھی ملوث ہیں

ایک 15 سال پرانے مقدمے کے سلسلے میں سلمان خان نے بدھ کو راجستھان کے شہر جودھ پور کی عدالت میں حاضر ہو کر بیان درج کروایا۔

کالے ہرن کے غیر قانونی شکار کے مقدمے کی سماعت کے لیے اب انھیں دس مارچ کو عدالت میں حاضر ہونے کے لیے کہا گيا ہے۔

واضح رہے کہ اس سلسلے میں سلمان دو بار جیل بھی جا چکے ہیں۔ پہلی بار سنہ 1998 میں اور دوسری بار 2007 میں۔

سلمان خان پر الزام ہے کہ سورج بڑجاٹيا کی فلم ’ہم ساتھ ساتھ ہیں‘ کی شوٹنگ کے دوران انھوں نے سیاہ ہرن کا شکار کیا تھا، اور چونکہ یہ ہرن معدومی کے خطرے سے دوچار ہے اس لیے اس کا شکار سنگین جرم میں شامل ہے۔

ان کے علاوہ بالی وڈ کے معروف فلمی ستارے سیف علی خان، تبّو، سونالی بیندرے اور نیلم کے بھی خلاف جنگلی حیاتیات سکیورٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج ہے۔ ان لوگوں کے خلاف یہ مقدمہ سلمان خان کو 15سال قبل غیر قانونی طور پر کالے ہرن کے شکار میں مدد کرنے کےسلسلے میں درج کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ سلمان خان پر اس کے علاوہ سنہ 2002 کے ’ہِٹ اینڈ رن‘ کے کیس کی بھی سماعت جاری ہے اور اس سلسلے میں ان پر نیا مقدمہ 12 فروری سے شروع ہونے کا امکان ہے۔

انھوں نے اس سے قبل دونوں مقدموں کو یکجا کردینے کی اپیل کی تھی لیکن ان کی یہ اپیل مسترد کر دی گئی تھی۔

شرلن کا ایف آئی آر

تصویر کے کاپی رائٹ Pr
Image caption شرلن چوپڑہ پلے بوائے میں آنے سے سرخیوں میں آئیں تھیں

بالی وڈ کی بولڈ اداکارہ شرلن چوپڑہ نے اپنی حوصلہ مندانہ فلم ’کام سوتر تھری ڈی‘ سے اپنے آپ کو مکمل طور علیحدہ کر لینے کے بعد فلم کے ہدایت کار روپیش پال کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی ہے۔

شرلن چوپڑہ نے روپیش پر دھوکہ دہی اور ضابطۂ اخلاق توڑنے کا الزام لگایا ہے۔

شرلن کے مطابق روپیش نے فلم کے لیے ان کی واجب الادا رقم بھی اب تک ادا نہیں کی ہے۔

واضح رہے کہ شرلن چوپڑہ بالغوں کی میگزین پلے بوائے کے صفحۂ اول پر آنے کے بعد سرخیوں میں آئی تھیں۔

شرلن کے مطابق جب انھوں نے روپیش کے دباؤ میں آنے سے انکار کر دیا تو انھوں نے ایک دوسری لڑکی سے فلم کے کچھ جذبات انگیز مناظر فلم بند کروائے ہیں، اور ان کے نام کے ساتھ فلم کو بین الاقوامی سطح پر فروخت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ان الزامات کے جواب میں روپیش نے کہا کہ فلم کے دوسرے ٹریلر میں اپنی فوٹیج نہ دیکھ کر شرلن بوکھلا گئی ہیں اور اس طرح کے الزامات لگا رہی ہیں۔

اسی بارے میں