ادوبا اور شرلوک کے لیے ایمی ایوارڈز

تصویر کے کاپی رائٹ ap
Image caption بہترین اداکارہ کا اعزاز حاصل کرنے والی نائجیرین نثراد اوزو ادوبا

امریکی ریاست لاس اینجلس میں ہونے والی ’تخلیقی آرٹس ایمی ایورڈ‘ کی رنگا رنگ سالانہ تقریب میں بہترین اداکاری اور ادائیگی پر اعزازات حاصل کرنے والوں میں اس مرتبہ ادکارہ اوزو ادوبا، ٹیلی ویژن کے میزبان جمی فالن اور بی بی سی کی ڈرامہ سیریز ’ شرلوک‘ شامل ہیں۔

اس تقریب میں ٹی وی کے مہمان اداکاروں اور پس پردہ کام کرنے والے تخلیق کاروں کی صلاحتیوں کے اعتراف میں انھیں اعزازات سے نوازا جاتا ہے۔

جمی فالن کو سنیچر کے دن نشر ہونے والے ایک مزاحیہ شو میں بہترین پیش کار (پریزینٹر) کا ایوارڈ ملا۔ جبکہ بی بی سی کے ڈرامے ’شرلوک ‘ کو پانچ مختلف شعبو ں میں ایوارڈ ملے ہیں۔

ادکارہ اوزو ادوبا ’کریزی ائیز‘ نامی کامیڈی شو میں بہترین مہمان اداکارہ قرار پائیں۔ اعزاز پانے کے بعد انھوں نے انتہائی جذباتی انداز میں اپنی والدہ کا شکریہ ادا کیا جو ایک بہتر زندگی کی تلاش میں نائجیریا سے امریکہ آئیں۔

انھوں نے پروگرام کے تخلیق کار کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ان کی خواہش ہے کہ اوروں کو بھی اسی خوبصورت انداز میں اپنی تخلیقی صلاحتیوں کو اجاگر کرنے کا موقع ملنا چاہیے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ایک گرما گرم سیاسی ڈرامے کے ایک کردار پر جو مارٹن بہترین اداکار قرار پائے

ڈرامے کے شعبے میں اے بی سی کے ایک گرما گرم سیاسی ڈرامے میں ’روون پوپ‘ کا کردار نبھانے پر جو مارٹن بہترین اداکار قرار پائے جبکہ اداکارہ ایلیسن جینی ’شو ٹائمز ماسٹرز آف سیکس میں‘ مارگریٹ سکلی کا کردار خوبصورتی سے نبھانے پر اعزاز کی حق دار ٹھریں۔

ایوارڈ ملنے پر انھوں نے شو کے پرڈویوسر، شو کے مصنف، اپنے ساتھی اداکاروں اور عملے کے ایک رکن کا بطور خاص شکریہ ادا کیا۔ انھوں نے کہا انھوں نے میرے پہلے ’سیکس سین‘ کی ریکارڈنگ سے پہلے مجھے ’جو کی شراب‘ پلائی وہ میرے لیے بے انتہا اہمیت کی حامل بن گئی۔

ایمی ایوارڈز کے ضوابط کے مطابق مہمان اداکار وہ ہوتے ہیں، جو کسی بھی ڈرامے، کامیڈی سیریل یا سیریز کے ہر شو میں شامل یا نمودار نہیں ہوتے۔

ایمی ایوارڈز میں برطانیہ کے شو ’سیٹر ڈے نائٹ لائیو‘ کو بھی کئی ایوارڈز ملے ہیں، جن میں ہدائت کاری، میک اپ اور ملبوسات کے علاوہ شو کے میزبان فالن شامل ہیں۔

ایک سے زیادہ شعبوں میں ایوارڈز حا صل کرنے والی برطانوی ’ شرلوک‘ سیریز دوسرے نمبر پر رہی۔ اسے بہترین موسیقی، سنگل کیمرہ ایڈینگ اور ساؤنڈ ایڈینگ پر بھی ایوارڈز سے نوازا گیا ہے۔

گیمز آف تھورنز، ٹرو ڈیٹیکٹو، خلائی دستاویزی پروگرام ’ اے سپیس ٹائم اوڈیسی‘ کو بھی ایوارڈز ملے ہیں۔

تخلیقی ایوارڈز پانے والوں میں برطانیہ میں جنگلی حیات پر بنے والے دستاویزی پروگرام ’ گیم آف لائنز ‘ کے نشر کار اور ہیر سٹائلنگ پر ڈاؤن ٹن شامل ہیں۔

اسی بارے میں