ایمی وائن ہاؤس کے مجسمے کی نقاب کشائی

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ایمی وائن ہاؤس کا ستائیس سال کی عمر میں شراب نوشی کی کثرت کے باعث انتقال ہوا تھا۔

شمالی لندن کے علاقے کیمڈن میں معروف برطانوی گلوکارہ ایمی وائن ہاؤس کے مجسمے کی نقاب کشائی کی گئی ہے۔ نوجوان گلوکارہ ایمی وائن ہاؤس تین برس قبل صرف ستائیس سال کی عمر میں انتقال کر گئیں تھیں۔

پیتل کے اس مجسمے کی نقاب کشائی ایمی وائن ہاؤس کی اکتیسویں سالگرہ کے دن کی گئی ہے۔

ایمی کے والد مچ وائن ہاؤس کا کہنا ہے کہ ایمی کو کیمڈن سے انتہائی پیار تھا اور یہ وہ جگہ ہے جسے ایمی کے فینز اس سے سب سے زیادہ منسوب کرتے ہیں۔

سکاٹ ایٹن کے بنائے گئے اس مجسمہ میں ایمی اپنے مخصوص ہئیر سٹائل میں کمر کے پچھلے حصے پر ہاتھ رکھے نظر آ رہی ہیں۔ کیمڈن مارکیٹ میں ہونے والی نقاب کشائی کی تقریب میں ایمی کے فینز اور رشتہ داروں نے شرکت کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ایمی وائن ہاؤس کے والد کے مطابق مجسمہ میں ایمی کی حقیقی شخصیت جھلکتی ہے

مجسمہ ساز ایٹن نے ایمی کے والد سے ملاقات کے بعد ایمی کے مجسمے پر کام کا آغاز کیا اور ان کے بقول یہ اتنا آسان کام نہیں تھا کیونکہ انھیں ایمی کی عادات اور شخصیت کے ساتھ ساتھ ان کی کمزویوں کو بھی مجسمے کا حصہ بنانا تھا۔ ’کمر پر ہاتھ رکھنا، ان کا مخصوص ہئیر سٹائل، سکرٹ کو ہاتھ میں پکڑنا، انوکھے انداز میں اپنا پیر موڑنا، ایمی کی یہ تمام عادات مجسمے کا حصہ ہیں۔

ایمی کے والد کا کہنا تھا کہ مجسمہ دیکھ کر وہ انتہائی جذباتی ہو گئے، مجسمہ ساز نے ایمی کے مجسمے کو حقیقت سے قریب تر بنا کر بہت اچھا کام کیا ہے اور انھیں امید ہے کہ مجسمہ ایمی کے فینز کو بہت پسند آئے گا۔

گلوکارہ ایمی وائن ہاؤس اپنے مخصوص سٹائل اور آواز کی وجہ سے برطانیہ کی نوجوان نسل میں بہت مقبول تھیں۔

ایمی اپنے ذاتی زندگی کے مسائل کے باعث منشیات اور الکوحل کی عادی ہو گئیں تھیں اور ان کا انتقال بھی الکوحل کی زیادہ مقدار پینے کے باعث ہوا۔