سری دیوی کی فلم ہدایتکار کو ’دھمکی‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC AFP
Image caption سری دیوی نے ہندی کے علاوہ تمل اور تیلگو فلموں میں بھی کام کیا ہے جبکہ رام گوپال ورما نے بھی کئی یادگار فلمیں تیار کی ہیں

بالی وڈ کی اپنے زمانے کی معروف اداکارہ سری دیوی نے ہدایتکار رام گوپال ورما کو فلم کا نام ’ساوتری‘ سے بدل کر ’سری دیوی‘ رکھنے پر نوٹس بھیجا ہے۔

اداکارہ سری دیوی اور ان کے فلم ساز شوہر بونی کپور نے رام گوپال ورما کو متنبہ کیا ہے کہ اگر انھوں نے فلم کا نام نہیں بدلا تو پھر وہ اس کے نتائج بھگتنے کے لیے تیار رہیں۔

نوٹس کا جواب دیتے ہوئے رام گوپال ورما نے کہا کہ ’فلم سری دیوی پر مبنی ہے۔ اس اداکارہ سری دیوی پر جس سے میں اپنے کالج کے زمانے میں بہت زیادہ متاثر ہوا تھا۔‘

رامو نے کہا: ’گذشتہ پانچ برسوں کے دوران میں نے میڈیا کے سامنے کئی بار اس چیز کا ذکر واضح انداز میں کیا ہے اور سب نے اسے مزاح کے طور پر قبول کیا ہے۔

انھوں نے مزید کہا: ’میں سری دیوی کے اس قدم سے بہت دلبرداشتہ ہوں لیکن میں فلم کا نام نہیں بدلوں گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Official Fan Page
Image caption ان کی یادگار فلموں میں صدمہ، لمحے، چالباز، مسٹر انڈیا، چاندنی، وغیرہ شامل ہیں

رام گوپال ورما کی یہ فلم 15 سال کے ایک لڑکے کی 25 سال کی ایک لڑکی پر فریفتہ ہونے کی کہانی ہے۔

سری دیوی کو پانچ بار فلم فیئر ایوارڈز مل چکے ہیں۔ انھوں نے ہندی کے علاوہ تمل اور تیلگو فلموں میں بھی کام کیا ہے۔ رام گوپال ورما نے بھی کئی یادگار فلمیں دی ہیں جن میں ستیا، رنگیلا وغیرہ شامل ہیں۔

ان کی یاگار فلموں میں صدمہ، لمحے، چالباز، مسٹر انڈیا، چاندنی، خدا گواہ، گمراہ، لاڈلا، جڑواں شامل ہیں۔

انھوں نے ایک عرصے کے بریک کے بعد ایک بار پھر سے بالی وڈ میں فلم انگلش ونگلش سے واپسی کی اور ان کی اداکاری کو ایک بار پھر پذیرائی ملی۔