کوچی کی دیواروں پر ’بھارتی بینکسی‘ کے فن پارے

تصویر کے کاپی رائٹ guesswho
Image caption گیس ھو کا کہنا ہے کہ گرافیٹی میں تاریخی کردار کو نئے تناظر میں پیش کیا جا رہا ہے

جنوبی ہند کے شہر کوچی کی دیواروں پر بنائی جانے والی تصویریں لوگوں کو اپنی جانب متوجہ کر رہی ہیں۔

’گیس ہو‘ کے نام سے معروف نامعلوم گرافیٹی فنکار کی ان تصویریں کو لوگ فیس بک اور ریڈاٹ پر شیئر کر رہے ہیں۔

اس فنکار کے کام کا موازنہ معروف برطانوی مصور بینکسی سے کیا جا رہا ہے جو اس قسم کی گرافیٹی کے لیے دنیا بھر میں مشہور ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ guesswho
Image caption ان کا کہنا ہے کہ یہ متبادل بصری زبان کا استعمال ہے

کوچی میں یہ گرافیٹی لوگوں کے تخیلات کو متحرک کرنے کا باعث بن رہی ہے۔

گیس ہو نے بی بی سی تمل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی شناخت ظاہر نہیں کر سکتے لیکن انہوں نے ای میل کے ذریعے بعض سوالات کے جوابات دیے۔

تصویر کے کاپی رائٹ guesswho
Image caption کچھ دنوں قبل بھارت میں کھلے عام بوسے کی مہم کے تحت مخصوص دن کوچی میں عوامی مقامات پر بعض لڑکے لڑکیوں نے بوسے لیے تھے

جب ان سے پوچھا گیا کہ آپ کون ہیں؟ایک شخص ہیں یا کوئی گروپ ہیں مرد ہیں یا عورت تو ان کا جواب تھا ’ہم وہ ہیں جو گرافیٹی کو پسند کرتے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ guesswho
Image caption ان گرافیٹی میں برطانی فنکار بینسکی کی جھلک نظر آتی ہے

جب ان سے پوچھا گیا کہ آپ کا پیغام کیا ہے کیا آپ سیاسی پیغام دینا چاہتے ہیں تو ان کا جواب تھا ’میرے خیال میں فن کا مقصد پیغام دینا نہیں ہے۔ یہ ایک بصری زبان کا استعمال ہے جس سے یہاں لوگ نابلد ہیں۔ تاہم لطیف طور پر اسے لوگ سیاست سے جوڑ سکتے ہیں۔ اس کے ذریعے سماجی حقائق کی عکاسی کی گئی ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ guesswho
Image caption اس میں جدید اور قدیم کے امتزاج کو بھی پیش کیا گیا ہے

واضح رہے کہ کچھ دنوں قبل یہاں ’کس آف لو‘ کے تحت مقامی مقامات پر بعض لوگوں نے کھلے عام بوسہ لینے کی کوشش کی تھی۔ یہاں سپر ہیرو شکاری شمبہو اور اپی ہپی (کارٹون کا کردار) کو دیکھا جا سکتا ہے جو اس مہم کی جانب اشارہ کرتے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ guesswho
Image caption ان گرفیٹی کے فنکار اپنی شناخت ظاہر نہیں کرنا چاہتے

آپ اس سے کیا حاصل کرنا چاہتے ہیں کے جواب میں کہا گیا: ’افسوس کہ ہمارے یہاں (بھارت میں) گرافیٹی کا چلن نہیں ہے اور اس کے فن کار بھی نہیں ہیں۔۔۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ guesswho
Image caption سٹریٹ آرٹ میں معروف کردار کا پیش کیا جانا نئی بات نہیں

آپ کو کس قسم کا رد عمل ملا ہے کے جواب میں کہا گیا کہ ’ابھی تک مکمل طور پرحیرت انگیز۔ سچ بات تو یہ ہے کہ اس توقعات نہیں تھی۔ کبھی نہیں سوچا تھا کہ جو لوگ فن کو کوئی اہمیت نہیں دیتے وہ اچانک اس پر بات کرنا شروع کر دیں گے۔ اس نے یقینا دلچسپی پیدا کی ہے اور دروازے گہولے ہیں۔‘

اسی بارے میں