بالی وڈ میں سپر ہٹ والدین کی فلاپ اولادیں

تصویر کے کاپی رائٹ Universal PR
Image caption ابھیشیک بچن اپنے والد کے آس پاس بھی نہیں پہنچ سکے

بالی وڈ میں پاؤں جمانے کے لیے کسی ’گاڈ فادر‘ ہونا ضروری ہے اور جن کے والدین فلم انڈسٹری سے ہوں تو ان کے کریئر کی راہ قدرے آسان ہو جاتی ہے۔

اس طرح کے خیالات کا عموماً اظہار کیا جاتا ہے لیکن بالی وڈ میں کئی ایسے والدین بھی ہیں جو فلم انڈسٹری کی معروف شخصیات میں شمار ہوتے ہیں لیکن ان کے بچوں کو وہ کامیابی نصیب نہ ہو سکی جو انھوں نے حاصل کی تھی۔

پیش ہیں ایسے چند بچے۔

1۔ ابھیشیک بچن

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption سنہ 2004 میں آنے والی منی رتنم کی فلم ’یوا‘ ابھیشیک بچن کی پہلی ہٹ فلم تھی

اداکار امیتابھ بچن کے بیٹے ابھیشیک بچن نے سنہ 2000 میں جے پی دتہ کی فلم ’رفيوجي‘ سے کریئر کا آغاز کیا۔

فلم کا باکس آفس پر برا حال رہا۔ ایک ہٹ فلم کے لیے ابھیشیک بچن کو تقریبا چار سال انتظار کرنا پڑا۔

اس دوران ان کی 14 فلمیں فلاپ رہیں۔ سنہ 2004 میں آنے والی منی رتنم کی فلم ’یوا‘ ابھیشیک بچن کی پہلی ہٹ فلم تھی۔

اس کے بعد ان کی ’بنٹی اور ببلی،‘ ’گرو،‘ ’دھوم‘ اور ’سرکار‘ جیسی چند فلموں کو ہی کامیابی ملی لیکن ابھیشیک اپنے والد جیسی شہرت کے آس پاس بھی نہ پہنچ سکے۔

2۔ بوبی دیول

تصویر کے کاپی رائٹ Beena Ahuja
Image caption بوبی دیول کی ’سولجر‘ ہٹ فلم ثابت ہوئی

اپنے زمانے کے ایکشن سٹار دھرمیندر کے بڑے بیٹے سنی دیول نے فلم انڈسٹری میں اپنی جگہ بنائی لیکن چھوٹے بیٹے بابی دیول امید کے مطابق نہ چل سکے۔

سنہ 1995 میں کریئر کا آغاز کرنے والے بابی دیول نے تقریبا41 فلموں میں کام کیا ہے۔

ان میں سے ’گپت،‘ ’سولجر،‘ ’بادل،‘ ’ہمراز‘ اور ’دوستانہ‘ جیسی فلموں کو ہی کامیابی مل سکی باقی تمام ناکام رہیں۔

3۔ تشار کپور

تصویر کے کاپی رائٹ Colors
Image caption جیتیندر کے بیٹے سے زیادہ ان کی بیٹی کامیاب ہے

مشہور اداکار جيتیندر کی بیٹی ایکتا کپور نے بطور پروڈیوسر ٹی وی اور فلموں میں اپنا سکہ جمایا لیکن ان کے بیٹے تشار کو اداکار کے طور پر زیادہ مقام حاصل نہیں ہو سکا۔

تشار نے فلم ’مجھے کچھ کہنا ہے‘ سے سنہ 2001 میں اپنے کریئر کا آغاز کیا تھا۔ ان کی فلم ’غائب،‘ ’خاکی،‘ ’گول مال‘ سیریز، ’دا ڈرٹی پکچر‘ اور ’کیا سوپر کول ہیں ہم‘ کامیاب رہیں۔

4۔ لو سنہا

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption شتروگھن سنہا کے بچے بھی اپنے والد کی شہرت کا چیک کیش کروانے میں ناکام رہے

اپنی بھاری بھرکم آواز سے لوگوں کو ’خاموش‘ کرنے والے اداکار شتروگھن سنہا کے بیٹے لو سنہا نے سنہ 2010 میں فلم ’صدیاں‘ میں کام کیا لیکن ان کو کوئی توجہ نہیں مل پائی البتہ ان کی بیٹی سوناکشی سنہا نے فلم ’دبنگ‘ کے بعد پیچھے مڑ کرنہیں دیکھا۔

لو سنہا کی فلم نہ مبصرین کو پسند آئی اور نہ ہی ناظرین کو۔

5۔ سنیل آنند

Image caption سنیل آنند نے ہدایت کاری کے میدان میں بھی قسمت آزمائی کی

بالی وڈ کے سدا بہار اداکار دیو آنند کے بیٹے سنیل آنند نے 80 کی دہائی میں ’آنند ہی آنند،‘ ’کار تھيف‘ اور ’میں تیرے لیے‘ جیسی فلموں کے ذریعہ بالی ووڈ میں اپنا پاؤں جمانے کی کوشش کی لیکن ہر بار منہ کے بل گرے۔

انھوں نے سنہ 2001 میں فلم ’ماسٹر‘ سے بالی وڈ میں ڈائریکٹر کے طور پر دوسری اننگز کی ابتدا کرنی چاہی لیکن اس میں بھی ناکامی ہاتھ لگی۔

6۔ مہاکشيہ چکرورتی

تصویر کے کاپی رائٹ Soap Box PR
Image caption متھن نے اپنے زمانے میں کئی یادگار کردار نبھائے

’ڈسکو ڈانسر‘ متھن چکرورتی کے بیٹے مہاکشيہ چکرورتی نے سنہ 2008 کی فلم ’جمّي‘ سے بالی وڈ میں قدم رکھا۔

فلم نہ تو تجزیہ نگاروں کو جچی اور نہ ہی ناظرین کو بھائی۔ مہاكشيہ آج بھی اپنے والد سے الگ پہچان بنانے کی کوشش میں لگے ہیں۔

7۔ فردين خان

Image caption فردین خان اب فلموں سے دور ہی نظر آتے ہیں

’قربانی،‘ ’دھرماتما،‘ ’جانباز‘ جیسی زبردست فلمیں بنانے والے اداکار اور پروڈیوسر ڈائریکٹر فیروز خان نے اکلوتے بیٹے فردين خان کو ’پریم اگن‘ فلم سے لانچ کیا گیا تھا۔

فردين نے رام گوپال ورما کی کچھ فلموں میں کام کیا جن میں انھیں کامیابی بھی ملی لیکن والد کی موت کے بعد ان کے فلمی سفر پر ایک قسم کا بریک سا لگ گیا۔

8۔ ایشا دیول

تصویر کے کاپی رائٹ Houture Images
Image caption ہیما مالنی اور دھرمیندر کی بیٹی ہونے کے باوجود ایشا کسی قسم کا جادو جگانے میں ناکام رہیں

’ڈريم گرل‘ ہیما مالنی اور دھرمیندر کی بیٹی ایشا دیول نے ماں کے نقشے قدم پر چلتے ہوئے فلموں میں اداکاری کرنے کا فیصلہ کیا۔

ایشا فلم انڈسٹری میں اپنی ماں کی طرح ’ڈريم گرل‘ نہیں بن سکیں۔

ان کا کریئر سنوارنے کے لیے ہیما مالنی نے ’ٹیل می او گاڈ‘ فلم کی ہدایت بھی کی لیکن اس کوشش سے بھی ایشا دیول کا کریئر نہیں سنبھلا۔

9۔ کمار گورو

تصویر کے کاپی رائٹ Mohanlal churiwala
Image caption کمار گورو اپنی فلم سے راتوں رات سٹار بن گئے تھے

اپنے زمانے کے ’جبلی کمار‘ کہے جانے والے اداکار راجندر کمار کے بیٹے کمار گورو اپنی پہلی فلم ’لو سٹوری‘ سے راتوں رات سپر سٹار بن گئے تھے۔

تاہم اس کے بعد ان کی کوئی بھی فلم باکس آفس پر نہ چل سکی۔ فلم ’نام‘ چلی بھی تو سنیل دت کے بیٹے سنجے دت بازی لے گئے۔

اسی بارے میں