یونیورسل پکچرز جوریسک ورلڈ کا سیکوئل بنائے گا

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption نئی فلم کی کہانی جوریسک ورلڈ کے ہدایتکار کولن ٹریورو (بائیں) لکھ رہے ہیں

فلم سٹوڈیو یونیورسل پکچرز نے اعلان کیا ہے کہ وہ رواں برس ریلیز ہونے والی سپرہٹ فلم جوریسک ورلڈ کا سیکوئل بنانے کا ارادہ رکھتا ہے۔

ڈائناسور فرینچائز کی اس چوتھی فلم نے دنیا بھر میں ڈیڑھ ارب ڈالر کا کاروبار کیا ہے۔

یونیورسل پکچرز کا کہنا ہے کہ جوریسک ورلڈ کا سیکوئل جون سنہ 2018 میں ریلیز کیا جائے گا۔

جوریسک ورلڈ خود بھی ایک حد تک سٹیون سپیل برگ کی فلم جراسک پارک کا سیکوئل ہے۔

یہ ہالی وڈ کی تاریخ میں سب سے زیادہ کاروبار کرنے والی فلموں کی فہرست میں ایواٹار اور ٹائٹینک کے بعد تیسرے نمبر پر ہے۔

فلم سٹوڈیو نے تاحال یہ نہیں بتایا کہ اس فلم کا ہدایتکار کون ہوگا اور نہ ہی اس کے نام کے بارے میں کچھ بتایا گیا ہے۔

اس فلم کے ایگزیکیٹو پروڈیوسر سٹیون سپیل برگ ہی ہوں گے جبکہ اس کی کہانی جوریسک ورلڈ کے ہدایتکار کولن ٹریورو لکھ رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ڈائناسور فرینچائز کی چوتھی فلم نے دنیا بھر میں ڈیڑھ ارب ڈالر کا کاروبار کیا ہے

جوریسک ورلڈ کی کہانی جوریسک پارک کے واقعات کے 22 برس بعد کی ہے جس میں ایک جینیاتی طور پر تبدیل شدہ ڈائنوسار اسلانبلار نامی تخیلاتی جزیرے میں موجود لوگوں کو دہشت زدہ کرتا ہے۔

جوریسک پارک سیریز کی پہلی فلم 1993 میں ریلیز ہوئی تھی اور اس نے دنیا بھر میں ایک ارب ڈالر سے زیادہ کا کاروبار کیا تھا۔

اس فلم میں ایک ایسے تھیم پارک کی کہانی بیان کی گئی تھی جس میں ڈائنوساروں کو کلون کر کے دوبارہ زندہ کیا گیا ہے۔

اس کے چار برس بعد سیریز کی دوسری فلم جوریسک پارک: دی لوسٹ ورلڈ نمائش کے لیے پیش کی گئی جبکہ 2001 میں جوریسک پارک تھری سامنے آئی جو شائقین اور ناقدین دونوں کو پسند نہیں آئی۔

تاہم تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ سیریز کی چوتھی فلم کی فقیدالمثال کامیابی نے اس فرنچائز کو ڈائنوساروں کے نئی نسل کے مداحوں کے لیے دوبارہ زندہ کر دیا ہے۔

اسی بارے میں