’بالی وڈ کی فلموں کے بڑے بجٹ سے ڈرنے کی ضرورت نہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ JPNA

اداکار اور ہدایتکار ہمایوں سعید نے کہا ہے کہ پاکستانی فلموں میں بولڈ سین پر خاندان والے شرمندہ تو ہوتے ہیں۔ وہ انڈین فلموں کے سین تو دیکھ لیتے ہیں کہ یہ لوگ تو کرتے ہی رہتے ہیں۔

ہمایوں سعید بی بی سی اردو کے گوگل ہینگ آؤٹ میں بات کر رہے تھے جس میں انھوں نے کہا کہ ’ہمارے ہاں تو ریٹنگ ہی نہیں ہے ہر قسم کی فلم دیکھنے کے لیے بچے بڑے خواتین سب چلے جاتے ہیں۔ پتا ہونا چاہیے کہ کون سی فلم بڑوں کے دیکھنے والی ہے اور کون سی بچوں کی۔‘

ہمایوں سعید اپنی فلم ’جوانی پھر نہیں آنی‘ کی ریلیز کے ساتھ فلموں میں ایک بار بھر زوردار انٹری دے رہے ہیں۔

ہمایوں سعید نے کہا کہ ’یہ فلم ایک زبردست فلم ہےجس میں مزا ہے، ڈانس ہے۔ ہمیں ایسی فلمیں بنانی چاہیے اور اس بات سے نہیں ڈرنا چاہیے کہ بالی وڈ کی فلموں کے بڑے بجٹ ہیں۔ ہماری فلموں کے بجٹ کم ہیں مگر ہمیں کوشش کرتے رہنا چاہیے۔ مجھے امید ہے لوگ اسے پسند کریں گے اور خوش ہوں گے۔‘

ہمایوں سعید نے کہا کہ اب ٹی وی پر بولڈ سین نہیں ہوتے، شروع میں ہوتے تھے جس پر بہت تنقید ہوئی۔

بولڈ سین کی بات ہو اور حمزہ علی عباسی کے ذکر نہ آئے یہ کیسے ہو سکتا ہے؟

حمزہ علی عباسی آئٹم نمبرز کے حوالے سے اپنے سخت موقف کے حوالے سے شدید تنقید کا نشانہ بنے ہوئے ہیں۔

ہمایوں سعید نے اس سوال کے جواب میں کہ حمزہ نے اس فلم کے حوالے سے مختلف باتیں کیں ہیں اور وہ اس کی پروموشن میں شریک نہیں ہوں گے، انھوں نے کہا کہ ’حمزہ نے فلم آفریدی میں کام کیا تھا میری اُس سے کافی دوستی ہے بلکہ میرے بھائیوں کی طرح ہے۔ حمزہ اس دور سے گزر رہا ہے جب انسان اپنے ارتقائی عمل سے گذر رہا ہوتا ہے۔ پہلے وہ میرے پاس آئے تھے ان کی اپنی ایک فلم تھی کم بخت جو اب ریلیز ہو گی۔ اُس میں وہ خود ایک آئٹم نمبر کرنا چاہ رہے تھے جس کا آّڈیو بھی انھوں نے مجھے سنایا تھا۔‘

ہمایوں نے کہا کہ ’اس کے بعد انھوں نے میرے ساتھ ڈرامہ ’پیارے افضل‘ کیا اور پھر یہ فلم سائن کی جوانی، تب تک وہ ایسا نہیں تھا۔ انھوں نے فلم کا خیال سنا اور کہا ہاں آپ فلم کر رہے ہیں تو میں بھی کروں گا۔ اس کے بعد دھرنے شروع ہوئے اور پی ٹی آئی کے ساتھ انھوں نے کام شروع کیا تب مجھے یہ محسوس ہوا کہ وہ اب سمجھنے لگا ہے کہ مجھے اب اس طرح کے کام نہیں کرنے چاہیں۔‘

جسم کی نمائش پر ہمایوں نے کہا کہ اگر ڈانس نمبر ہے اور اس میں لڑکی نے موزوں کپڑے پہنے ہوں تو کوئی ہرج نہیں ہے لیکن جسم کی غیر ضروری نمائش نہیں ہونی چاہیے۔

اسی بارے میں