ایلٹن جان کو اس بار اصل روسی صدر کا فون

تصویر کے کاپی رائٹ RIA Novosti
Image caption اس بار صدر پوتن نے واقع میں سر ایلٹن سے رابطہ کیا تھا اور انھیں اس مذاق پر ناراض نہ ہونے کی درخواست بھی کی: کریملن

کریملن کے مطابق روسی صدر ولادیمیر پوتن نے مشہور برطانوی گلوکار سر ایلٹن جان کو فون کر کے ان سے ملاقات کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔

سر ایلٹن جان نے کہا ہے کہ وہ ہم جنس پرستی کے حوالے سے صدر پوتن کے ’احمقانہ‘ خیالات کے بارے میں ان سے بات کرنا چاہتے ہیں۔

’ایلٹن جان واقعی سمجھے کہ پیوتن ہی سے بات کر رہے ہیں‘

حال ہی میں سر ایلٹن ایک پرینک کالر یعنی جعلی کالر کے ہاتھوں مذاق کا شکار بنے جنھوں نے فون پر صدر ولادمیر پوتن بن کر ان سے بات کی تھی۔

لیکن کریملن کے ترجمان نے روسی ذرائع ابلاغ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس بار صدر پوتن نے واقع میں سر ایلٹن سے رابطہ کیا تھا اور انھیں اس مذاق پر ناراض نہ ہونے کی درخواست بھی کی۔

ترجمان کے مطابق صدر پوتن نے جمعرات کو کہا کہ جب دونوں کے شیڈول اجازت دیں گے تو وہ سر ایلٹن سے ملنے کے لیے تیار ہوں گے اور کہ وہ برطانوی گلوکار سے ’کسی بھی مسئلے‘ پر بات کریں گے۔

روس پر ہم جنس پرستی کے قوانین کے حوالے سے بین الاقوامی سطح پر تنقید کی گئی ہے۔ ان قوانین میں سنہ 2013 میں جاری کردہ ایک مسودہ قانون شامل ہے جس کے تحت ان لوگوں کے خلاف قانونی کارروائی کی جا سکتی ہے جو 18 سال کی عمر سے کم لوگوں کو ہم جنس پرستی کے بارے میں معلومات فراہم کرتے ہیں۔

ہیومن رائٹس واچ نے گذشتہ سال ایک رپورٹ شائع کی تھی جس کے مطابق اقلیتوں سمیت ہم جنس پرستوں کے خلاف تشدد کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے جنھیں روکنے میں روس ناکام رہا ہے۔

ستمبر کی ابتدا میں سر ایلٹن جان نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم جنس پرستوں کے حوالے سے صدر پوتن کے خیالات ’متعصب‘ اور ’احمقانہ‘ تھے۔

انھوں نے کہا کہ چاہے صدر ’ان کی پیٹھ پیچھے ان پر ہنسیں اور انھیں بیوقوف کہیں، وہ ان سے پھر بھی بات کرنا چاہیں گے۔‘

اس کے بعد سر ایلٹن جان نے اپنے انسٹا گریم اکاؤنٹ پر صدر پوتن سے ان سے بات کرنے کا شکریہ ادا کیا۔‘

لیکن کریملن کے ترجمان نے اس فون کال کی تردید کی جس کی ریکارڈنگ بعد میں روسی ٹی وی پر نشر کی گئی تھی۔

اسی بارے میں