مرد اداکار سے کم معاوضہ ملنے پر ڈرامے سے انکار

تصویر کے کاپی رائٹ PA

ہالی وڈ کی مشہور اداکارہ سِینا مِلر کا کہنا ہے کہ انھوں نے ایک ڈرامہ اس لیے ٹھکرا دیا کیوں کہ اُنھیں اُن کے ساتھی مرد اداکار کے مقابلے میں کم معاوضے کی پیشکش کی جا رہی تھی۔

انھوں نے ای نیوز نامی ویب سائٹ کو بتایا کہ ’بدقسمتی سے ہمیں اپنے تخلیقی خوابوں کی قیمت چُکانے کے لیے یہ کرنا پڑ رہا ہے۔‘ ان کا کہنا تھا: ’مجھے اُس ڈرامے کو چھوڑنا پڑا ہے جسے میں کرنے کی خواہش مند تھی کیوں کہ مجھے اپنے ساتھی مرد اداکار کے مقابلے میں نصف سے بھی کم معاوضے کی پیشکش کی جا رہی تھی۔‘

مِلر نے پروڈکشن ہاؤس کا نام نہیں بتایا۔ اُن کا یہ بیان ہالی وڈ اداکارہ جینیفر لورنس کے ہالی وڈ انڈسٹری میں صنفی امتیاز برتنے سے متعلق مضمون لکھنے کے بعد سامنے آیا ہے۔

لورنس نے گذشتہ سال سونی پکچرز کی خفیہ ای میلز سامنے آنے کے بعد تحریری شکل میں غصے کا اظہار کیا تھا۔ ان ای میلز سے معلوم ہوا تھا کہ اُنھیں اپنے ساتھی مرد اداکاروں کے مقابلے میں کم معاوضے کی ادائیگی کی گئی۔

ایک ای میل میں انکشاف ہوا کہ ہالی وڈ کی فلم ’امیریکن ہسل‘ میں جینیفر لورنس اور ان کی ساتھی اداکارہ ایمی ایڈمز کو ان کے ساتھی مرد اداکاروں کی نسبت خاصا کم معاوضہ ادا کیا گیا تھا۔

ہالی وڈ کی معروف شخصیت لینا ڈنہم کی ویب سائٹ ’لینی‘ پر شائع ہونے والے ایک مضمون میں لورنس نے کہا کہ ’مجھے سونی پکچرز پر غصہ نہیں آیا تھا، مجھے اپنے آپ پر غصے آیا تھا۔ مذاکرات کرنے والی شخصیت کی حیثیت سے یہ میری ناکامی تھی کیونکہ میں نے جلد ہی ہار مان لی تھی۔‘

وہ کہتی ہیں کہ ’یہ کہنا جھوٹ نہیں ہو گا کہ میں نہیں چاہتی تھی کہ میرے لیے پسندیدگی میں تبدیلی آئے۔ یہ بات میرے فیصلوں پر اثرانداز ہوئی اور میں نے معاہدے پر زیادہ مذاکرات نہیں کیے۔ میں نہیں چاہتی تھی کہ مجھے ایک ’’مشکل‘‘ اور ’’بگڑی‘‘ ہوئی شخصیت سمجھا جائے۔‘

مِلر نے یہ بات چیت معروف اداکار بریڈلی کوپر اور اپنے ایک مشترکہ انٹرویو کے دوران کی۔ وہ بریڈلی کوپر کے ساتھ عنقریب آنے والی فلم ’برنٹ‘ میں جلوہ گر ہوں گی۔

کوپر نے ای ویب سائٹ کو بتایا کہ انھوں نے مضمون تو نہیں پڑھا لیکن ’ایک بات جو میں ضرور کہنا چاہوں گا کہ یہ دلچسپ ہے کیوں کہ آپ یہ سوچیں کہ صرف آپ ہی ہیں جو اتنا معاوضہ لینے کے حق دار ہیں تو یہ درست نہیں ہے۔ اس ذہنیت کو تبدیل کرنے اور اپنے حق کے لیے اُسی طرح سے ڈٹ جانے کی ضرورت ہے جیسے سینا نے کیا۔‘

لورنس کے مضمون کو اُن کے کئی ہالی وڈ دوستوں کی حمایت حاصل ہوئی ہے۔

جیسیکا چیسٹن، الزبتھ بنکس اور ایما واٹسن اُن لوگوں میں شامل ہیں جنھوں نے ٹویٹس کے ذریعے لورنس کے مضمون کی حمایت کی۔

واٹسن نے کہا: ’جینیفر لورنس مجھے تم سے محبت ہے۔‘ بنکس نے اعلان کیا کہ ’مجھے تم سے محبت ہے جینیفر لورنس۔‘ جبکہ چیسٹن نے کہا ’ہاں! بالکل ٹھیک کہا اس لڑکی نے۔‘

گذشتہ ہفتے ہالی وڈ کی سب سے معروف اور صف اوّل کی اداکارہ میرِل سِٹریپ کی جانب سے بھی صنفی امتیاز برتنے پر آواز اٹھائی گئی تھی اور ان کا کہنا تھا کہ انھیں بھی ساتھی مرد اداکاروں کی نسبت کم معاوضہ دیا جاتا ہے۔

اور ’میڈیا میں جنس‘ کے عنوان کے تحت ہونے والے ایک مذاکرے میں آسکر ایوارڈ جیتنے والی مشہور اداکارہ جینا ڈیوس نے مزید خواتین کو سکرین پر آنے اور خواتین کو ٹی وی اور فلم دونوں میں مزید چیلنجنگ کردار ادا کرنے کی دعوت دی۔

ڈیوس کا کہنا تھا کہ ’ہم نادانستہ طور پر نسل درنسل مردوں اور خواتین کو غیر مساوی دکھانے کی تربیت دے رہے ہیں۔‘

اسی بارے میں