عمر میں فرق کے بارے میں سوچا ہی نہیں: کیٹ ونسلیٹ

تصویر کے کاپی رائٹ Entertainment Film Distributors
Image caption فلم میں کیٹ ونسلیٹ کے ساتھی لیئم ہیمس ورتھ ان سے 14 برس چھوٹے ہیں

مشہور اداکارہ کیٹ ونسلیٹ کا کہنا ہے کہ ان کی نئی فلم ’دی ڈریس میکر‘ میں ان کے ساتھی اداکار کی کم عمری کے بارے میں انھوں نے کبھی ’سوچا ہی نہیں۔‘

اس فلم میں کیٹ ونسلیٹ کے ساتھ کام کرنے والے لیئم ہیمس ورتھ ان سے 14 سال چھوٹے ہیں اور انھوں نے حالیہ دنوں میں اعتراف کیا ہے کہ انھیں اپنے کردار کو تسلیم کرنے سے پہلے خدشات تھے کہ وہ ’کچھ زیادہ ہی کم عمر‘ ہیں۔

برطانوی سٹار ونسلیٹ نے بی بی سی کو بتایا: ’میں نے ہماری عمر کے بارے میں سوچا ہی نہیں۔ میں اپنے آپ کو ایسی چیزوں سے پریشان نہیں کرنا چاہتی۔‘

دریں اثناء فلم کی ڈائریکٹر جاسلین مورہاؤس نے کہا کہ فلم میں لیئم ہیمس ورتھ کا کردار فلم بینوں کے لیے ایک ’ دلچسپ چیلنج‘ ہوگا۔

انھوں نے فلموں میں عام طور پر بڑی عمر کے مرد اداکاروں کو کم عمر کی خواتین اداکاراؤں کے ساتھ دیکھے جانے کے حوالے سے کہا: ’یہ بات اکثر بالکل الٹ ہوتی ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Entertainment Film Distributors
Image caption 1950 کی دہائی میں آسٹریلیا میں بنائی گئی یہ فلم ایک خاتون درزی پر مبنی ہے

مور ہاؤس نےگذشتہ ماہ جنوبی کوریا میں ’بسان انٹرنیشنل فلم فیسٹول‘ میں شرکت کرتے ہوئے کہا کہ ’میں نے سوچا کہ میں ایک خاتون ڈائریکٹر ہوں اس لیے میں کچھ اور ہی کروں گی۔ اس قسم کے بہت واقعات پیش آتے ہیں جہاں مرد اپنے سے بڑی عمر کی خواتین سے محبت کرتے ہیں، خاص طور پر جب وہ کیٹ جیسی دکھتی ہوں۔‘

سنہ 1950 کے آسٹریلیا پر بنائی گئی یہ فلم ایک خاتون درزی پر مبنی ہے جو کئی برسوں کے بعد اپنے آبائی گاؤں میں واپس ان المناک حالات کی تفتیش کرنے آتی ہیں جن کی وجہ سے انھیں بچپن میں اپنا گاؤں چھوڑنے پر مجبور کیا جاتا ہے۔

جاسلن مور ہاؤس نے کہا: ’اگر اس فلم کا ایک پیغام ہے تو وہ یہ ہے کہ عورتوں کی قدر کرو۔‘

دی ڈریس میکر برطانیہ میں 20 نومبر کو ریلیز کی جائے گی۔