’ہم نے بالی وڈ پر رانیوں کی طرح راج کیا ہے‘

Image caption آشا بھونسلے نے تقریبا سات دہائی تک پلے بیک سنگر کے طور پر کام کیا اور اب بھی تیار ہیں

بی بی سی نے اپنے سنہ 2015 کے ’100 خواتین‘ سیزن کے لیے دنیا بھر سے، زندگی کے تمام شعبوں اور عمر کے ہر حصے سے تعلق رکھنے والی ایسی خواتین کا انتخاب کیا ہے جو دیگر خواتین کو کچھ کرنے کی تحریک دیتی ہیں۔

مشہور بھارتی گلوکارہ آشا بھونسلے بھی ان میں سے ایک ہیں۔ انھوں نے بی بی سی ایشین نیٹ ورک کی شبنم محمود سے ایک خصوصی ملاقات میں اپنے گانے کے جنون اور حال اور ماضی کی فلموں میں فرق کے متعلق بات کی۔

Image caption لتا منگیشکر اور آشا بھونسلے نے نصف صدی تک ہندی فلم انڈسٹری پر راج کیا

آشا بھونسلے کا پلے بیک سنگنگ کریئر تقریباً سات دہائیوں پر محیط ہے۔

82 سالہ آشا بھونسلے بھارت کے علاوہ دنیا بھر میں پروگرام پیش کرتی ہیں اور کہتی ہیں کہ وہ محسوس کرتی ہیں کہ ابھی بھی ان کی عمر 30 برس ہے۔

انھوں نے سینکڑوں اداکاراؤں کو اپنی آواز دی ہے لیکن اب وہ کئی نئی فلموں پر تنقید کرتی ہیں کہ ان میں پلاٹ، مکالمے اور اچھے گیت نہیں ہوتے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Pancham Unmixed
Image caption آشا بھونسلے کے نام سب سے زیادہ ایوارڈز ہیں

سنہ 1943 میں اپنے کریئر کی ابتدا کرنے والی گلوکارہ آشا بھونسلے نے 12 ہزار سے زیادہ گیت ریکارڈ کرائے ہیں جبکہ گینیز بک آف ریکارڈ کے مطابق موسیقی کی تاریخ میں وہ سب سے زیادہ ایوارڈز حاصل کرنے والی فنکار ہیں۔

80 کی دہائی میں ہونے کے باوجود وہ کہتی ہیں کہ ’میں اندر سے میں 30 کی ہوں اور میں ہر چیز کر سکتی ہوں۔ گیت کا موڈ ہوتا ہے تو گیت گاتی ہوں۔ اگر اداس ہوں تو ’آپ نے چین سے مجھے جینے نہ دیا۔۔۔‘ یا پھر اس موڈ میں کہ ’پیا اب تو آجا۔۔۔‘

انھوں نے مسکراتے ہوئے کہا کہ ’آپ اگر نوجوانوں کے ساتھ ہیں تو ’کمبخت عشق ہی گائیں گے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Kambhakt Ishq
Image caption وہ حالیہ فلموں کو کہانی، مکالمے اور اچھے نغموں کی کمی کے لیے تنقید کا نشانہ بناتی ہیں

جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا ’مجھ کو ہوئی نہ خبر‘ جیسے نئی قسم کے گیت گانے میں انھیں کوئی پریشانی ہوئی تھی تو انھوں نے کہا کہ ’نہیں، نہیں۔ یہ اچھے نغمے ہیں۔ ان میں نہ موسیقی خراب ہے نہ الفاظ۔‘

لیکن وہ کہتی ہیں کہ اب ’اچھے مکالمے نہیں ہیں۔ اچھی اداکاری نہیں ہے۔ صرف رقص ہے۔ نہ ہی اچھی موسیقی ہے، صرف لے اور لے ہے اور مجھے یہ پسند نہیں۔‘

ہرچند کہ انھیں رومانٹک اور جدید نغموں کے لیے یاد کیا جاتا ہے لیکن ان کا کہنا ہے کہ آج کل پیش کیے جانے والے گیت ’بے ہودہ‘ ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ’ایک عرصے تک ایک طرف لتا (ان کی بہن) تھی اور ایک طرف آشا، کوئي تیسری گلوکارہ نہیں تھی۔ ہم نے بالی وڈ کی فلم انڈسٹری پر راج کیا ہے۔ رانیوں کی طرح راج کیا۔‘

اسی بارے میں