ہنری مور کا بنایا ہوا مجسمہ 27 لاکھ ڈالر میں نیلام

تصویر کے کاپی رائٹ CHRISTIES IMAGES LTD
Image caption سنہ 1898 میں یارک شائر میں پیدا ہونے والے ہنری مور برطانیہ کے معروف ترین فنکاروں میں سے ایک ہیں

معروف برطانوی فنکار ہنری مور کا بنایا ہوا مجسمہ 27 لاکھ امریکی ڈالر میں فروخت ہوا ہے۔

آرام دہ حالت میں بیٹھے ہوئے انسانی پیکر کا تجریدی شاہکار ’عمبلِیشِیس‘ کو بدھ کی شام لندن میں ہونے والی ایک نیلامی میں نامعلوم خریدار نے خریدا ہے۔

آرٹ کا کاروبار اور نیلام گھر کرسٹیز کی جانب سے برطانوی اور آئرش آرٹ کے نمونوں کی نیلامی کے موقع پر ایل ایس لاؤری کی پینٹنگ ’دی ریلوے پلیٹ فارم‘ دوسرے نمبر پر سب سے زیادہ قیمت میں یعنی 25 لاکھ امریکی ڈالر میں فروخت ہوئی ہے۔

نیلام گھر کا کہنا ہے کہ فن کے پانچ نمونے انفرادی طور پر 10 لاکھ امریکی ڈالر سے زائد میں فروخت ہوئے جو ان کی ’مسلسل مانگ‘ کا مظہر ہے۔

ان فن کے نمونوں میں ڈیم باربرا ہیپ ورتھ کا سنہ 1953 میں ہاتھوں سے بنایا ہوا مجسمہ شامل ہے۔ خریداروں نے اس مجسمے کے لیے’ابتدا ہی میں مسابقتی بولیاں لگانی شروع کردی تھیں‘ جس کے بعد یہ 22 لاکھ امریکی ڈالر میں فروخت ہوا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ CHRISTIES IMAGES LTD
Image caption ایل ایس لاؤری کی پینٹنگ ’دی ریلوے پلیٹ فارم‘ 25 لاکھ امریکی ڈالر میں فروخت ہوئی

دیگر فن کے نمونوں میں ڈیوڈ بُومبرگ کی پینٹنگ شامل ہے جس میں یروشلم کے ’دی چرچ آف دی ہولی سپوکا‘ کی منظر کشی کی گئی ہے۔ یہ پینٹنگ 18 لاکھ امریکی ڈالر میں فروخت ہوئی ہے اور یہ اس آرٹسٹ کے فن پاروں کی اب تک سب سے زیادہ لگائی گئی بولی ہے۔

سر سٹینلی سپینسر کی پینٹنگ ’ہلڈا وِد بلیو بیلز‘ 17 لاکھ امریکی ڈالر میں فروخت ہوئی ہے۔

سنہ 1898 میں یارک شائر میں پیدا ہونے والے ہنری مور برطانیہ کے معروف ترین فنکاروں میں سے ایک ہیں۔

کرسٹیز کا مزید کہنا ہے کہ ’ایل ایس لاؤری کےفن پاروں کی مانگ آج بھی بہت ہے۔‘

نیلامی میں جو سب سے زیادہ قیمت لاؤری کے کسی فن پارے کی ادا کی گئی تھی وہ 56 لاکھ برطانوی پاؤنڈ تھی جو کہ سنہ 2011 میں ان کی پینٹنگ ’دی فٹبال میچ‘ کے لیے ادا کی گئی تھی۔

ریلوے کی منظر کشی والی ان کی ایک اور پینٹنگ ’سٹیشن اپروچ، مانچسٹر‘ گذشتہ سال 23 لاکھ برطانوی پاؤنڈ میں فروخت ہوئی تھی۔

اسی بارے میں