پیرس کے ہلاک شدگان کو میڈونا کا خراج عقیدت

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption میڈونا نے تین مشہور گانے گائے جن میں ’گوسٹ ٹاؤن،‘ جان لینن کا ’امیجن‘ اور ’لائک ا پریئر‘ شامل تھے

مشہور گلوکار میڈونا نے گذشتہ ماہ پیرس میں ہونے والے دہشت گرد حملوں کے ہلاک شدگان کی یاد میں گانا گا کر انھیں خراج عقیدت پیش کیا ہے۔

بدھ کو برسی کے علاقے میں اپنا کانسرٹ ختم ہونے پر انھوں نے ٹویٹ کی تھی کہ وہ پیرس حملوں کے ایک مقام ’پلاس دا لا رپبلیک‘ جا رہی ہیں جو متاثرین کے لیے یادگار بن چکا ہے۔

’پیرس کے ایک اور خودکش حملہ آور کی شناخت‘

’پیرس حملوں کے سرغنہ یونان میں پولیس سے بچ نکلے تھے‘

راک بینڈ یو2 کا نئے گانے میں پیرس کو خراجِ عقیدت

میڈونا اپنی نئی البم ’ریبل ہارٹ‘ کو فروغ دینے کے لیے پیرس کا دورہ کر رہی تھیں۔ انھوں نے اسی دوران اپنے دس سالہ بیٹے ڈیوڈ کے ساتھ پلاس دا لا رپبلیک جانے کا فیصلہ کیا۔

انھوں نے تین مشہور گانے گائے جن میں ’گوسٹ ٹاؤن،‘ جان لینن کا ’امیجن‘ اور ’لائک آ پریئر‘ شامل تھے۔

پلاس دا لا رپبلیک میں میڈونا کے ساتھ اُن کے ٹور میں شامل گٹار بجانے والے مونٹی پٹمن بھی موجود تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption بدھ کو برسی کے علاقے میں اپنی کانسرٹ ختم ہونے پر انھوں نے ٹویٹ کی تھی کہ وہ پیرس حملوں کے ایک مقام ’پلاس دا لا رپبلیک‘ جا رہی ہیں

مونٹی نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ ’وہ متاثرین کو خراج عقیدت پیش کرنا چاہتی تھیں۔ انھیں اس شہر سے بہت پیار ہے۔ یہ بہت اہم لمحہ ہے جسے میں کبھی نہیں بھولوں گا۔‘

گذشتہ ماہ پریس میں شدت پسندوں نے سلسلہ وار حملے کیے تھے جن میں 130 لوگ ہلاک ہوئے تھے۔

میڈونا نے بدھ کی رات کو کانسرٹ میں موجود شائقین سے کہا کہ ’سب کو پتہ ہے کہ ہم یہاں کیوں آئے ہیں۔ ہم صرف کچھ امن کے گانے گانا چاہتے ہیں، پیار اور محبت پھیلانا چاہتے ہیں اور اُن لوگوں کو خراج عقیدت پیش کرنا چاہتے ہیں جو تقریباً ایک ماہ پہلے ہلاک ہوئے تھے۔‘

انھوں نے مزید کہا: ’ہم روشنی پھیلانا چاہتے ہیں، ہم سب کو اِس کی ضرورت ہے۔‘

پلاس دا لس رپبلیک میں میڈونا کے شائقین میں پیٹ ہال نامی ایک برطانوی سیاح بھی موجود تھے۔ انھوں نے اے ایف پی کو بتایا: ’میڈونا کی کارکردگی بہت متاثر کن تھی اور اُس میں بہت سچائی تھی۔‘

بدھ کو پیرس میں کانسرٹ کے دوران میڈونا نے کہا: ’ہم خوف زدہ نہیں ہوں گے۔ میں اُن لمحات کے بارے میں سوچ رہی ہوں جو چار ہفتے پہلے پیش آئے تھے۔ پیرس اور فرانس کا دل ہر شہر میں دھڑکتا ہے۔‘

انھوں نے مزید کہا: ’میں پہلی بار جب یہاں آئی تو 20 سال کی تھی اور یہاں آ کر ہی میں نے گلوکار بننے کا فیصلہ کیا تھا۔ تو شکریہ پیرس، کہ تم نے میرے دل میں یہ شوق پیدا کیا۔‘

اسی بارے میں