بالی وڈ شخصیات جو سال بھر خبروں میں رہیں

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سلمان خان کی اس برس کی سپر ہٹ فلمیں ’بجرنگی بھائی جان‘ اور ’پریم رتن دھن پائيو‘ رہیں

بالی وڈ کی معروف شخصیات تو اکثر بحث کا موضوع بنی رہتی ہیں لیکن سنہ 2015 میں بعض ہستیوں کے تذکرے خاص طور پر ہوتے رہے۔

بی بی سی نے ایسی ہی بعض شخصیات پر نظر ڈالی ہے جو اپنی فلموں یا ذاتی زندگی کی وجہ سے سال بھرسرخیوں میں رہے۔

بالی وڈ میں 2015 کو اگر تینوں خانوں شاہ رخ، سلمان اور عامر کا سال کہا جائے تو بےجا نہ ہو گا۔ اس سال ان تین خانوں نے اپنی عمر کے 50 برس مکمل کیے اور تقریباً ہر ماہ ہی سرخیوں میں بنے رہے۔

دبنگ خان

بالی وڈ کے دبنگ سلمان خان کئي وجوہات کے سبب بحث کا موضوع بنے رہے۔ ان کا ہٹ اینڈ رن کیس، ان کی فلمیں ’بجرنگی بھائی جان‘ اور ’پریم رتن دھن پائيو‘ کی باکس آفس پر کامیابی، شاہ رخ خان کے ساتھ دوبارہ دوستی کے مناظر کا ٹی وی پر نظر آنا، ٹی وی شو ’بگ باس‘ کی میزبانی اور پروڈیوسر کے طور پر فلم ’ہیرو‘ کے ساتھ فلم جگت کے دو نئے بچوں کو لانچ کرنے جیسے واقعات سے سال بھر ان کے تذکرے ہوتے رہے۔

کنگ خان

سلمان خان کے بعد شہرت پانے میں اس برس دوسرے نمبر پر کنگ خان شاہ رخ رہے۔

اپنی سالگرہ کے موقعے پر ایک انٹرویو کے دوران بھارت میں ’عدم برداشت‘ سے متعلق بحث پر ان کے بیان سے تنازع پیدا ہوا اور ان کے مخالفین نے انھیں کھل کر تنقید کا نشانہ بنایا۔

اسی برس ان کی سپر ہٹ فلم ’دل والے دلھنيا لے جائیں گے‘ کے 20 برس مکمل ہوئے۔ اسی فلم میں ان کی ساتھی ہیروئن اداکارہ کاجول کے ساتھ ایک بار پھر وہ ’دل والے‘ فلم میں دکھائی دیے۔ اسی برس سلمان خان کے ساتھ انھوں نےاپنے سات برس کے پرانے جھگڑے کو بھلاتے ہوئے ’کرن ارجن‘ والی دوستی پھر سے شروع کر دی۔

تصویر کے کاپی رائٹ SPICE
Image caption بالی وڈ کے تیسرے خان عامر کی اس برس کوئی فلم تو نہیں آئی لیکن پھر بھی وہ بحث کا موضوع بنے رہے

عامر خان

بالی وڈ کے تیسرے خان عامر کی اس برس کوئی فلم تو نہیں آئی لیکن پھر بھی وہ بحث کا موضوع بنے رہے۔ بھارت میں ’عدم برداشت‘ پر جاری بحث کے متعلق ان کے ایک متنازع بیان کی وجہ سے ان پر کئی جانب سے شدید نکتہ چینی ہوئی۔ عامر اس برس اس تنازعے کی وجہ سے کافی دنوں تک یاد رکھے جائیں گے۔ اس کے علاوہ سنہ 2016 میں ریلیز ہونے والی ان کی فلم ’دنگل‘ کی وجہ سے بھی وہ خوب سرخیوں میں رہے۔

اداکار رنویر سنگھ نے اس سال دو ہٹ فلموں ’دل دھڑکنے دو‘ اور ’باجي راؤ مستانی‘ میں کام کیا اور کافی تعریف لوٹی۔ وہیں سال کے آغاز میں ’اے آئي بي‘ کے ایک پروگرام کے دوران ان پر فحاشی پھیلانے کے الزامات بھی لگے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Spice Pr
Image caption پروڈیوسر اور ہدایت کار کرن جوہر اس سال پوری طرح فلاپ ثابت ہوئے

کرن جوہر

پروڈیوسر اور ہدایت کار کرن جوہر اس سال پوری طرح فلاپ ثابت ہوئے۔ فلم ’بامبے ویلویٹ‘ میں انھوں نے جو کردار نبھایا اس کی وجہ سے ان پر کافی بحث ہوئی تو ٹی وی پروگرام ’اےآئی بي‘ کے تنازعے میں بھی ان کا نام آیا۔ لیکن اسی برس وہ فلم ’بہوبالی‘ کے فلم ساز بھے رہے اور اس فلم کی زبردست کامیابیوں کے سبب وہ سرخیوں میں بھی رہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ spice
Image caption فلم ’پيكو،‘ ’تماشا‘ اور پھر ’باجي راؤ مستانی‘ اس برس کی کامیاب فلمیں قرار پائیں

دیپکا پاڈوکون

اداکاراؤں کے معاملے میں اس برس کی ہیڈ لائن کوئن دیپکا پاڈوکون رہیں جنھوں نے اس سال تین سپر ہٹ فلمیں دیں اور باکس آفس پر اپنی کامیابی کا سکّہ جما دیا۔

فلم ’پيكو،‘ ’تماشا‘ اور پھر ’باجي راؤ مستانی‘ اس برس کی کامیاب فلوں سے ہیں۔ اور ہاں دیپکا کی سوشل میڈیا پر ہالی وڈ کے اداکار ون ڈیزل کے ساتھ ایک تصویر نے ان کی ہالی وڈ میں دلچسپی کو بھی آشکار کر دیا۔ اس سال ان کے ’كليویج تنازعے‘ اور ’مائی چوئس‘ ویڈیو کے بھی کافی تذکرے رہے۔ جب انھوں نے اس بات کا انکشاف کیا کہ کس طرح وہ شدید ڈپریشن میں مبتلا ہوئیں تو اس پر بھی میڈیا میں خوب بحث ہوئی۔

پرینکا چوپڑا

دیپکا کے بعد اداکاراؤں میں شہرت پانے والوں میں دوسرے نمبر پر پرینکا چوپڑا رہیں۔ انھوں نے اس برس نہ صرف دو ہٹ فلمیں ’دل دھڑکنے دو‘ اور ’باجي راؤ مستانی‘ میں کام کیا بلکہ انھوں نے ہالی وڈ کے ایک ٹی وی شو ’كوانٹیكو‘ میں کام کر کے بھی خوب تعریف لوٹی۔

انوشکا شرما

اداکارہ انوشکا شرما نے اس سال بطور فلم ساز اپنی فلم ’این ایچ 10‘ریلیز کی اور اس فلم کی خوب تعریف ہوئی۔ لیکن وہ کرکٹر وراٹ کوہلی کے ساتھ تعلق کی وجہ سے بھی بحث کا موضوع بنی رہیں۔ حد تو تب ہو گئی جب کرکٹ ورلڈ کپ میں بھارتی ٹیم کی شکست کا ٹھیکرا انوشکا کے سر ہی پھوڑ دیا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اداکارہ انوشکا شرما نے اس سال بطور فلم ساز اپنی فلم ’این ایچ 10‘ریلیز کی اور اس فلم کی خوب تعریف ہوئی

اس سال اداکارہ کنگنا راناوت اور ایشوریہ رائے بچّن کے بھی خوب تذکرے رہے۔ ایشوریہ نے فلم ’جذبہ‘ کے ساتھ فلم انڈسٹری میں پانچ برس کے بعد زبردست واپسی کی اورکنگنا نے ’تنو ویڈز منو رٹرن‘ میں دتّو کے کردار سے ناقدین کو منھ توڑ جواب دیا۔

سال 2015 میں کچھ فلم ساز اور ہدایت کار بھی بحث کا موضوع بنے رہے۔

فلم ’کورٹ‘ کے ہدایت کار چیتنيا تماہاڑے ان میں سے ایک ہیں جن کی فلم كین فلم فیسٹیول میں کئي ایوارڈز کی مستحق قرار پائی۔ ان کی اس فلم کو بھارت کی جانب سے آسکر ایوارڈز کے لیے بھیجا گیا ہے۔

دوسرے ہدایت کار نیرج گھیاؤن رہے جن کی فلم ’مسان‘ کو بین الاقوامی سطح پر کافی سراہا گيا۔

سپرہٹ فلموں کے ہدایت کاروں میں روہت شیٹی (دل والے)، سنجے لیلا بھنسالی (باجي راؤ مستانی) امتیاز علی (تماشا) کبیر خان (بجرنگی بھائی جان اور فینٹم)، ایس ایس راج مولي وغیرہ بھی باکس آفس پر کافی کامیاب رہے۔

اسی بارے میں