شرمین عبید کی فلم کا پریمیئر وزیراعظم ہاؤس میں

تصویر کے کاپی رائٹ APP

پاکستان کے وزیرِاعظم میاں محمد نواز شریف نے پاکستانی ہدایتکارہ شرمین عبید چنائے کی آسکر ایوارڈ کے لیے نامزد ہونے والی مختصر دورانیے کی فلم کا پریمیئر وزیر اعظم ہاؤس میں کروانے کا اعلان کیا ہے۔

پیر کو شرمین عبید چنائے نے وزیرِ اعظم ہاؤس اسلام آباد میں وزیرِ اعظم میاں نواز شریف سے ملاقات کی۔

اس ملاقات کے دوران ان کی مختصر دورانیے کی فلم ’اے گرل ان دا ریور‘ کا پریمیئر 22 فروری کو وزیرِ اعظم ہاؤس میں کرانے کا اعلان کیا گیا۔

اس موقع پر میاں نواز شریف نے کہا کہ غیرت کے نام پر قتل بہت حساس معاملہ ہے اور حکومت کی کوشش ہے کہ معاشرے سے اس داغ کو دھویا جا سکے۔

نواز شریف کے مطابق خواتین معاشرے کا اہم جزو ہیں اور پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کا دارومدار خواتین کی بہبود سے وابستہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ معاشرتی برائیوں پر حکومت اور سول سوسائٹی کے باہمی اشتراک سے قابو پایا جاسکتا ہے۔

پاکستانی ڈائریکٹر شرمین عبید چنائے نے کہا کہ انھیں خوشی ہے کہ ملک کے وزیرِ اعظم کو اس بات کا ادراک ہے اور وہ غیرت کے نام پر قتل کے سدباب کے لیے اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ lotus
Image caption ’اے گرل ان دا ریور‘ نامی دستاویزی فلم غیرت کے نام پر قتل کے بارے میں ہے

شرمین عبید چنائے نے غیرت کے نام پر قتل کے ملک سے سدباب کے لیے کی جانے والی کوششوں میں مدد کرنے پر وزیرِ اعظم کا شکریہ ادا کیا۔

وزیر اعظم اور شرمین عبید چانائے کے درمیان ملاقات میں مریم نواز شریف بھی موجود تھیں۔

یاد رہے کہ آسکر ایوارڈ کی تقریب رواں سال 29 فروری کو منعقد کی جائے گے۔

اس سے قبل دوسرا آسکر ایوارڈ ملنے کی امید پر شرمین عبید کا کہنا تھا کہ کامیابی اور ناکامی اللہ کے ہاتھ میں ہے۔

شر مین عبید چنائے اس سے قبل بھی سنہ 2012 میں دستاویزی فلم ’سیونگ فیس‘ کے لیے آسکر ایوارڈ جیت چکی ہیں۔

شر مین عبید ان 11 خواتین ہدایتکاروں میں سے ایک ہیں جنھوں نے نان فکشن کے شعبے میں آسکر ایوارڈ حاصل کر رکھا ہے۔

اسی بارے میں